حیات آباد پولیس نے شہریوں سے رقم چھیننے والاگروہ گرفتار

حیات آباد پولیس نے شہریوں سے رقم چھیننے والاگروہ گرفتار

پشاور(کرائم رپورٹر)کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے ہسپتالوں میں آنے والے مریضوں اوران کے تیمارداروں سے دھوکہ دہی اورفراڈکے زریعے بھاری رقوم لوٹنے والے منظم گروہ کو بے نقاب کرتے ہوئے 3 ملزمان کو گرفتار کرلیا ملزمان کے قبضے سے لوٹے گئے 50 ہزار روپے اور 3موبائل فونز بھی برآمد کرلئے گئے ملزمان نے انٹاروگیشن کے دوران متعدد وارداتوں میں ملوث ہونے کا انکشاف کر لیا جن کو مزید تفتیش کے لئے حوالات منتقل کر دیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق مدعی مہر گل ولد عجب خان سکنہ افغانستان نے چند روز قبل حیات آباد پولیس کو رپورٹ کی تھی کہ وہ افغانستان سے علاج معالجہ کی غرض سے رحمان میڈیکل انسٹیٹیوٹ آیا تھاجہاں پاک ترک سکول کے قریب دو ملزمان نے دھوکہ دہی کے ذریعے اس سے رقم لے کر فرار ہو گئے جبکہ اسی طرح مدعی لیاقت علی ولد امیر سید سکنہ لکی مروت نے بھی حیات آباد پولیس کو رپورٹ کی تھی کہ وہ اپنی بیٹی کو علاج معالجہ کی غرض سے ہسپتال لایا تھا کہ چند نامعلوم افراد نے اس سے دھوکہ دہی کے ذریعے 50 ہزار روپے چوری کر لئے ۔ایس پی کینٹ وسیم ریاض نے علاج معالجہ کی غرض سے آنے والے معصوم اور مدد کے طلب گار شہریوں سے دن دیہاڑے رقم چوری اور چھیننے والے واقعات کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے اے ایس پی حیات آباد نجم الحسنین اور ایس ایچ او تھانہ حیات آباد اختر نصیر پر مشتمل خصوصی ٹیم تشکیل دیتے ہوئے وقوعات میں ملوث ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرنے کا حکم جاری کر دیا جنہوں نے انتھک محنت کرتے ہوئے معصوم مریضوں سے رقم چھیننے میں ملوث 3ملزمان شاہ زمان ٗ رحیم دادپسران جلندرخان اورنور گل ولد ملتانے سکنہ شبقدر کو گرفتار کر لیا ملزمان نے ابتدائی تفتیش کیدوران دیگر وارداتوں میں ملوث ہونے کابھی اعتراف کیاہے جن کو مزید تفتیش کے لئے حوالات منتقل کر دیا گیا ہے جہاں ملزمان سے مزید سنسنی خیز انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر