مہمند ،سرکاری اور نجی سکولوں کے الگ الگ سپورٹس فیسٹیول کا آغاز

مہمند ،سرکاری اور نجی سکولوں کے الگ الگ سپورٹس فیسٹیول کا آغاز

پشاور ( سپورٹس رپورٹر)قبائلی ضلع مہمند میں سرکاری اور پرائیویٹ کے الگ الگ سپورٹس فیسٹیول کا پرجوش انداز سے آغاز۔ سرکاری ہائی سکولوں کی 22 ٹیمو ں اور پرائیویٹ سکولوں کے 20 ٹیموں کے درمیان 18 نومبر تک میچز اورچھوٹے گیمز کے مقابلے ہونگے ۔کیپٹن روح اللہ شہید سپورٹس سٹیڈیم غلنئی میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر عرفان اللہ وزیر اور مہمند ڈسٹرکٹ سپورٹس منیجر سعید اختر نے باقاعدہ افتتاح کیا۔تفصیلات کے مطابق 5 نومبر سے قبائلی ضلع مہمند میں ڈسٹرکٹ سپورٹس آفس اور ضلعی انتظامیہ کے تعاون سے انٹر گورنمنٹ ہائی سکولز اور آل پرائیویٹ سکولز کے مابین سپورٹس مقابلے جوش و خروش سے شروع ہیں۔ اس سلسلے میں باقاعدہ افتتاحی تقریب کیپٹن روح اللہ شہید سپورٹس سٹیڈیم غلنئی میں منعقد ہوئی جس میں تمام سکولوں کے پرنسپلز ، سپورٹس کمیٹی کے ارکان جانزادہ ، گل درب خان اور زرداعلی خان ،کھیلوں کی رنگین وردیوں میں ملبوس سینکڑوں طلباء کھلاڑیوں اور درجنوں اساتذہ کرام نے شرکت کی۔ مہمان خصوصی ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر عرفا ن اللہ وزیر اور مہمند ڈسٹرکٹ سپورٹس منیجر سعید اختر نے بیٹ پر شارٹ لگا کر اور والی بال کو تھرو کرکے کھیل کھود مقابلوں کا باقاعدہ افتتاح کیا۔ اس موقعہ پر سپورٹس منیجر سعید اختر نے بتایا کہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر عرفان اﷲ وزیر اور ڈائریکٹر سپورٹس محمد نواز کی خصوصی ہدایت پر ضلع مہمند میں شروع ہونے والے سالانہ سرکاری سکولز اور پرائیویٹ سکولز کے مقابلوں کے ایک ساتھ انعقاد کا مقصد نجی اور سرکاری سکولوں کو قریب لانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 18 نومبر تک جاری رہنے والے کرکٹ ، والی بال ،فٹ بال اور دیگر میجر کھیلوں کے علاوہ چھوٹے گیمز کے مقابلے ہونگے۔ سرکاری اورنجی سکولوں کے فاتح ٹیموں کے درمیان آپس میں فائنل میچ ہونگے۔ تاکہ ڈائریکٹر سپورٹس قبائلی اضلاع محمد نواز کے وژن کے مطابق مہمند میں سکولوں کے پلیٹ فارم سے ہر علاقے سے گراس روٹ لیول کے کھلاڑی ابھر کر سامنے آسکے۔ مہمان خصوصی ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر عرفان اللہ وزیر نے کھلاڑیوں اور سپورٹس آفیشل سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کھیل کھود کی ترقی زندہ اور پائندہ قومی کی نشانی ہے۔ مہمند سپورٹس ڈیپارٹمنٹ کا کردار اس حوالے سے کافی آگے ہے۔ ڈپٹی کمشنر مہمند واصف سعید کی ہدایات پر اس اہم ایونٹ کو کامیاب بنانے کے لئے بھر پور اقدامات کئے گئے ہیں۔ انہوں نے ڈی سی مہمند کی طرف سے کھلاڑیوں اور مہمند سپورٹس ڈیپارٹمنٹ کو ایسی سرگرمیاں جاری رکھنے میں مکمل تعاون کا یقین دلایا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر