فاٹا کو این ایف سی ایوارڈ میں حصہ دلانے کیلئے کردار ادا کرینگے : عمران خان

فاٹا کو این ایف سی ایوارڈ میں حصہ دلانے کیلئے کردار ادا کرینگے : عمران خان

اسلام آباد(آئی این پی،آن لائن )وزیر اعظم عمران خان نے100روزہ پلان کے تحت وزارتوں کی کارکردگی قوم کے سامنے لانے کا فیصلہ کرتے ہوئے وزارتوں کو پہلے مرحلے کی کارکردگی رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کردی ۔تفصیلات کے مطابق 100روزہ پلان کے تحت وزیراعظم عمران خان نے وزارتوں کی کارکردگی کا پہلے جائزہ لینے کا فیصلہ کیا ہے اور وزارتوں کو 100روزہ پلان کے پہلے مرحلے کی رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کردی ہے۔ ہر وزارت کو تحریری رپورٹس جمع کرانا ہوگی کہ پلان کے اہداف حاصل ہوئے یا نہیں۔وزرا ء کو رپورٹ میں بتانا ہوگا کہ قومی خزانے کو کتنا فائدہ پہنچایا، کفایت شعاری،سادگی پرعمل ہوا؟ عوام کو ریلیف کے لیے کیا اقدامات کیے اور حکومتی منشورپرعملدرآمد ، نئی سکیموں، کرپشن کے سد باب کیلئے کیا اقدامات کیے۔وزیر اعظم وزارتوں کی کارکردگی قوم کے سا منے لائیں گے اور اعلی کارکردگی کے حامل وزراکوحکومتی و عوامی سطح پر کریڈٹ دیں گے۔ فاٹا انضمام کے بعد انتظامی و دیگر معاملات پراب تک ہونے والی پیش رفت سے متعلق جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وزیر اعظم نے کہا کہ فاٹا انضمام قبائلی علاقوں کے لوگوں کی زندگیوں کو بدلنے اور ان میں واضح بہتری لانے کے مقصد کے پیش نظر کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ بعض قوتیں فاٹا انضمام کے خلاف اپنے مذموم مقاصد کی خاطر لوگوں کو گمراہ کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے مل کر ان قوتوں کے ارادوں کو ناکام بنانا ہے۔ وزیرِ اعظم نے کہا کہ انتظامی و دیگر اصلاحات کے عمل میں فاٹا کے لوگوں کو پتہ چلنا چاہیے کہ انضمام انہی کی بہتری اور بھلائی کے لئے کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت این ایف سی ایوارڈ میں فاٹا کو حصہ دلانے کے لئے اپنا کردار ادا کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ قبائلی علاقے تعمیر و ترقی کے حوالے سے ملک کے دیگر حصوں سے کافی پیچھے ہیں۔ ان علاقوں کو ملک کے دیگر حصوں کے برابر لانے کے لئے سب کو مل جل کر کوشش کرنا ہوگی۔ انضمام شدہ علاقوں میں افسران کی تعیناتی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیرِ اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ ان علاقوں میں صرف انہی افسران کو تعینات کیا جائے جن کی شہرت نیک ہو اور جن میں عوام کی خدمت کا جذبہ ہو۔ملک سے پولیو کے خاتمہ کیلئے ٹاسک فورس کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ملک سے پولیو کا خاتمہ قومی ترجیح ہے اور اس مقصد کیلئے وفاقی حکومت صوبوں کو مکمل تعاون فراہم کرتی رہے گی۔اجلاس میں پولیو کے خاتمے کی مہم کے اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔ وزرائے اعلیٰ نے اجلاس کے شرکاء کو صوبوں میں پولیو کے خاتمے کے لئے اقدامات سے آگاہ کیا۔ دریں اثناء وزیراعظم عمران خان سے چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی نے ملاقات کی،جس میں مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان آج لاہور میں داتا دربار کے باہر پہلے شیلٹر ہوم منصوبے کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔

عمران خان

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)وزیراعظم عمران خان نے ماضی میں نظرانداز اہل افسران کو اہم عہدوں پرتعینات کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن سے خودمختاراداروں اور افسران سے متعلق رپورٹ طلب کرلی۔علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان نے چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کیلئے خواجہ آصف کا نام مسترد کردیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق حکومتی جماعت نے چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی تعیناتی پر پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کے ناموں پر غور کیا گیا ، وزیراعظم عمران خان نے خواجہ آصف کا نام زیر بحث لانے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ منی لانڈرنگ میں ملوث شخص کواہم عہدہ کیسے دے سکتے ہیں۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ پی اے سی چیئرمین کیلئے اچھی شہرت کے پارلیمنٹیرین کوترجیح دیں۔

اہل افسران/ خواجہ آصف

مزید : صفحہ اول