سردی کے 3 ماہ صبح شام گیس کی لوڈشیڈنگ نہیں ہو گی

سردی کے 3 ماہ صبح شام گیس کی لوڈشیڈنگ نہیں ہو گی

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ) موسم سرما کے تین ماہ کے دوران گھریلو صارفین کے لیے صبح و شام کے اوقات میں گیس کی لوڈ شیڈنگ نہیں ہوگی، درآمدی صنعتوں کو 3 سو ایم ایم سی ایف ڈی گیس فراہم کی جائے گی، دیگر صنعتوں کو سردیوں میں گیس کی فراہمی بند رہے گی۔تفصیلات کے مطابق سردیوں کے لیے گیس لوڈ مینجمنٹ پلان تیار کرلیا گیا۔ گھریلو صارفین کو دن کے اوقات میں گیس لوڈ شیڈنگ کا سامنا رہے گا۔دن کے اوقات میں گیس لوڈ شیڈنگ کی جائے گی تاہم صبح و شام کے اوقات میں گھریلو صارفین کے لیے گیس لوڈ شیڈنگ نہیں ہوگی۔ درآمدی صنعتوں کو 3 سو ایم ایم سی ایف ڈی گیس فراہم کی جائے گی، دیگر صنعتوں کو سردیوں میں گیس کی فراہمی بند رہے گی۔مذکورہ گیس لوڈ مینجمنٹ پلان کا نفاذ 3 ماہ یعنی دسمبر سے مارچ تک کے لیے ہوگا۔

گیس لوڈشیڈنگ

لاہور( نیوز رپورٹر)صارفین کے لئے ایک نئی مشکل ، گرمیوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کے بعد اب گیس صارفین اب گیس کی لوڈشیڈنگ کے لئے تیار ہوجائیں اور اس حوالے سے گیس لوڈ مینجمنٹ پلان کی سمری ای سی سی کو بھجوادی گئی ہے جس میں جنوری سے گیس کی لوڈشیڈنگ کرنے کی استدعا کی گئی ہے اور اس میں یہ بتایا گیا ہے کہ ملک میں گیس کی سردیوں میں قلت کی وجہ سے لوڈشیڈنگ کرنا بہت ضروری ہوگا اور اس حوالے سے قائم کی گئی کمیٹی کا اجلاس بارہ نومبر کو طلب کیا گیا ہے جس میں اس حوالے سے بات چیت کی جائے گی اور امید ظاہر کی جارہی ہے کہ جنوری میں چونکہ صارفین سردی کی وجہ سے سب سے زیادہ گیس کا استعمال کرتے ہیں اس لئے اس کی قلت پیدا ہوگی جس کے باعث اس کی لوڈشیڈنگ کافیصلہ کیا گیا ہے اور اس حوالے سے ہونے والے اجلاس میں اس کی سفارش کی جائے گی ۔ نئی حکومت نے دعوی کیا تھا کہ وہ عوام کو اس مشکل میں نہیں ڈالے گی مگر اس کے باوجود بھی گیس کی کمی وجہ سے حکومت لوڈشیڈنگ کرنے پر مجبور ہوگئی ہے، اجلاس میں اس بات کا فیصلہ کیا جائے گا کہ ایک دن میں کتنے گھنٹے تک گیس کی لوڈشیڈنگ ہوگی مگر حکومتی ذرائع کے مطابق گیس کی قلت کے باوجود بھی کوشش کی جائے گی کہ کم سے کم گیس کی لوڈشیڈنگ کا شیڈول مرتب کیا جائے۔

مزید : صفحہ اول