محکمہ صحت مارکیٹ سے جعلی ادویات تلف کرنے میں ناکام

محکمہ صحت مارکیٹ سے جعلی ادویات تلف کرنے میں ناکام

لاہور (جنرل رپورٹر )محکمہ صحت مختلف امراض کی جعلی ادویات مارکیٹ سے تلف کرنے میں ناکام ہو گیا ہے دو ماہ قبل ڈرگ ٹیسٹنگ لیبارٹری نے 50 کمپنیوں کی سو سے زائد مختلف امراض کی ادویات کو غیرمعیاری قرار دیا جن میں سے اکثر جعلی تھیں ڈی ٹی ایل نے محکمہ صحت کو یہ ادویات مارکیٹ سے اٹھانے کی سفارش کی تھی ان میں وائرل انفیکشن کے خلاف اور مختلف دل گردے اور بچوں کی بیماریوں میں استعمال ہونے والی ادویات شامل تھیں جن میں قابل ذکر آگمینٹن سیرپ ٹین زو انجکشن بسکوپان پینا ڈول سرفہرست ہیں۔مگر دو ماہ کا عرصہ گزرنے کے باوجود محکمہ صحت کے کان پر جوں تک نہ رینگی اور لوگ یہ جعلی ادویات کھا کرمزید بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں اس حوالے سے مشیر صحت حنیف پتافی سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ معاملے کا نوٹس لیا جائے گا جو بھی ذمہ دار ہوا اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی یہ معاملہ ہماری حکومت آنے سے پہلے کا ہے یہ معاملہ عوام کی صحت کا ہے معافی نہیں دی جائے گی جس کی کوتاہی ثابت ہو گی اس کو نشان عبرت بنائیں گے ۔

جعلی ادویات

مزید : صفحہ آخر