تمام ارکان کو قواعد پڑھنے کی ضرورت ہے،سید اویس شاہ

تمام ارکان کو قواعد پڑھنے کی ضرورت ہے،سید اویس شاہ

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ سیداویس قادر شاہ نے جمعہ کو سندھ اسمبلی کے اجلاس کے دوران اپنے ایک نکتہ اعتراض پر ایوان کو آگاہ کیا کہ گزشتہ روزسندھ اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی نے سندھ سیکرٹریٹ کا بغیر بتائے اچانک دورہ کیا،اپوزیشن لیڈر نے ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے دفتر میں افسران اور عملے کے ساتھ ڈانٹ ڈپٹ کی۔انہوں نے کہا کہ قائد حزب اختلاف سمیت تمام ارکان کو قواعد پڑھنے کی ضرورت ہے ۔کسی بھی سرکاری دفتر کے دورے سے قبل متعلقہ حکام کو آگاہ کرناضروری ہوتاہے ،سرکاری دفاتر انہیں وضاحت دینے کے پابند نہیں ہیں۔ اویس قادر شاہ نے طنزیہ انداز میں کہا کہ پرانے پاکستان میں ایسا نہیں ہوتا تھا،نئے پاکستان پر کچھ بات نہیں کرسکتے کیونکہ انکے سو دن پورے نہیں ہوئے ،پرانے پاکستان کے لوگ تہذیب جانتے تھے، نئے والوں کے بارے میں ہم کچھ نہیں کہہ سکتے ۔جس پر اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ دورے سے قبل محکمے کے سیکرٹری کو آگاہ کیاگیا تھاوہاں جو بریفنگ دی گئی وہ انتہائی تشویشناک ہے ،محکمہ ٹرانسپورٹ کا کوئی منصوبہ وقت ہر مکمل نہیں ہورہا ،گرین لائن ، یلو لائن، بلو لائن سمیت تمام منصوبے ادھورے پڑے ہیں کراچی کے شہری ٹرانسپورٹ کے مسائل کا شکار ہیں کراچی کے شہریوں کے لئے آواز بلند کرنا ہمارا فرض ہے اور ہم اس معاملے پر آواز بلند کرتے رہیں گے ۔اس موقع پر وزیر ٹرانسپورٹ کا کہنا تھا کہ فردوس شمیم بھول گئے گرین لائن منصوبہ وفاق کا ہے۔ جواب میں قا ئد حزب اختلاف نے کہا کہ سندھ کو لوٹا جارہا ہے خاموش نہیں رہ سکتے۔ فردوس نقوی نے کہا کہ فالودے والے کے اکاو نٹس سے اربوں نکل رہے ہیں۔ اس کا حساب کون دے گا؟

مزید : کراچی صفحہ اول