سری لنکا: صدر کا 5 جنوری کو ملک میں قبل ازوقت انتخابات کروانے کا اعلان

سری لنکا: صدر کا 5 جنوری کو ملک میں قبل ازوقت انتخابات کروانے کا اعلان
سری لنکا: صدر کا 5 جنوری کو ملک میں قبل ازوقت انتخابات کروانے کا اعلان

  

کولمبو(ویب ڈیسک) سری لنکا کے صدر میتھری پالا سری سینا نے قومی پارلیمنٹ تحلیل کرتے ہوئے 5 جنوری کو قبل از وقت انتخابات کروانے کا اعلان کردیا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق سری لنکن صدرکے اس فیصلے سے ملک میں جاری سیاسی بحران مزید شدت اختیار کر گیا۔واضح رہے کہ میتھری پالا سری سینا نے اچانک ایک حکم جاری کرتے ہوئے وزیراعظم ’رنیل وکراماسنگے‘ کو برطرف کردیا تھا اور ان کی جگہ سابق صدر ’مہندرا راجہ پکسے‘ کو تعینات کردیا تھا جن کا جھکاؤ چین کی طرف زیادہ ہے۔

نئے وزیراعظم کی تعیناتی کے بعد صدر نے پارلیمنٹ کو بھی تحلیل کردیا تھا، رنیل وکراماسنگے کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ انہیں مذکورہ سیاسی صورتحال پر قانون ساز ادارے سے رجوع کرنے سے روکنے کی کوشش ہے۔

بعدازاں صدر میتھری پالا سری سینا نے 14 نومبر کو دوبارہ پارلیمنٹ کا قیام کرنے کا اعلان کیا تھا تاہم اب ایسا ہوتا نظر نہیں آتا۔خیال رہے کہ سابق وزیراعظم نے اپنی سرکاری رہائش گاہ خالی کرنے سے انکار کردیا تھا، جن کا کہنا تھا کہ وہ ہی وزیراعظم ہیں اور انہیں اراکین کی اکثریت کی حمایت حاصل ہے۔

صدر کی جانب سے پارلیمنٹ تحلیل کرنے کے فیصلے پر ردِ عمل دیتے ہوئے رنیل وکراماسنگے کی پارٹی کے ایک رکنِ اسمبلی ہرشا ڈسلوا کا کہنا تھا کہ یہ آئین کی سنگین خلاف ورزی ہے۔

مزید : بین الاقوامی