کیا آپ کو معلوم ہے مین آف دی میچ کے اس طرح کے ایوارڈز کے ساتھ میچ کے خاتمے پر کیا کیا جاتا ہے؟ حقیقت جان کر آپ کو بے حد دکھ ہوگا

کیا آپ کو معلوم ہے مین آف دی میچ کے اس طرح کے ایوارڈز کے ساتھ میچ کے خاتمے پر ...
کیا آپ کو معلوم ہے مین آف دی میچ کے اس طرح کے ایوارڈز کے ساتھ میچ کے خاتمے پر کیا کیا جاتا ہے؟ حقیقت جان کر آپ کو بے حد دکھ ہوگا

  

نئی دلی(نیوز ڈیسک)یہ تو ہم سب جانتے ہیں کہ ’مین آف دی میچ‘ کھلاڑی کو ملنے والا بڑا سا چیک یقیناًوہ بینک میں لے کر نہیں جاتا ہوگا، لیکن پھر یہ کہاں جاتا ہے، یہ بات بھی تو کسی کو معلوم نہیں۔ اس سوال کا جواب بالآخر مل گیا ہے، مگر اسے جان کر یقیناً آپ کو افسوس ہو گا۔ تلخ انکشاف یہ ہے کہ یہ چیک کوڑے کے ڈھیر پر جاتا ہے۔ یقین نہ آئے تو بھارتی ریاست کیرالا کی ایک این جی او کی جانب سے پوسٹ کی گئی یہ تصویر دیکھ لیجئے۔ 

یہ وہی چیک ہے جو رویندرا جدیجا کو ویسٹ انڈیز کے خلاف ون ڈے میچ میں بہترین کارکردگی دکھانے پر دیا گیا تھا۔ ایک لاکھ بھارتی روپے کا یہ چیک مقامی محکمہ صفائی کے ملازم جیان نے کوڑے کے ڈھیر پر پڑا دیکھا۔ جیان کا کہنا ہے کہ میچ کے بعد صفائی کے دوران انہیں یہ کوڑے کے ڈھیر پر پڑا ملا۔ یہ پلاسٹک سے بنی ہوئی ایک بڑی شیٹ ہے جس پر مین آف دی میچ ایوارڈ اور انعامی رقم تحریر ہے۔

اس افسوسناک انکشاف نے سوشل میڈیا صارفین کو پریشان کر دیا ہے۔ اکثر لوگوں کا اس بات پر تنقید کرتے ہوئے کہنا ہے کہ کاروباری تشہیر کی غرض سے اس طرح کا چیک بنانا اور بعد ازاں اسے کوڑا دان میں پھینک دینے میں کوئی ہرج نہیں لیکن اتنا تو خیال کرنا چاہیے کہ پلاسٹک کو کوڑا دان کے حوالے کرنا ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ کرنے کے مترادف ہے۔ یہ چیک پلاسٹک کی بجائے گتے سے کیوں نہیں بنایا جا سکتا، جسے کوڑا دان میں پھینک کر یہ توقع کی جاسکتی ہے کہ کچھ عرصے بعدیہ تحلیل ہو کر قدرتی اجزا میں تبدیل ہوجائے گا۔ پلاسٹک تو ہزاروں سال بھی پڑا رہے تو تحلیل نہیں ہوتا۔ 

مزید : ڈیلی بائیٹس /کھیل