ہتک عزت دعویٰ کیس کی سماعت 20 نومبر تک ملتوی

 ہتک عزت دعویٰ کیس کی سماعت 20 نومبر تک ملتوی

  



لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے گلوکارہ میشا شفیع کی جانب سے گلوکارعلی ظفر کے خلاف 200 کروڑ روپے کے ہتک عزت کے دعویٰ جبکہ گلوکارعلی ظفر کی طرف سے میشا شفیع کے خلاف 100 کروڑ روپے کے ہتک عزت کے دعویٰ پر سماعت 20 نومبر تک نومبر تک ملتوی کردی،عدالت نے فریقین کی باہمی رضامندی سے دونوں کیسوں کی سماعت بغیر کارروائی آئندہ پیشی تک ملتوی کی ہے،ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ نے میشا شفیع نے میڈیا پر بیان بازی کرنے پر علی ظفر کے خلاف 200 کروڑ روپے کے ہتک عزت کا دعوی کی سماعت کی، عدالت نے اداکار علی ظفر سے میشا شفیع کی دائر درخواست پر جواب طلب کر رکھا ہے،میشا شفیع کے وکیل ثاقب جیلانی نے کہا کہ علی ظفر نے میرے خلاف میڈیا پر بیان بازی کی، علی ظفر کے الزامات کے باعث میری شہرت کو نقصان پہنچا، علی ظفر کو 200 کروڑ روپے کا ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دیاجائے،علی ظفر کے وکلاء حشام احمد خان اور بیرسٹر عنبرین نے کہا کہ ہماری طرف سے درخواست دفعہ 10 کے تحت دی گئی اس کا بھی فیصلہ کیا جائے۔ عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد کیس کی مزید سماعت آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی کردی،علاوہ ازیں ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ نے گلوکارعلی ظفر کی جانب سے میشا شفیع کے خلاف 100 کروڑ روپے کے ہتک عزت کے دعوی پر سماعت 20 نومبر تک ملتوی کرتے ہوئے مقدمہ میں دیگر گواہان کو طلب کرلیا۔

مزید : علاقائی


loading...