آزادی مارچ کے نام پر ملک میں افراتفری پھیلائی جا رہی ہے:ملک انور تاج

آزادی مارچ کے نام پر ملک میں افراتفری پھیلائی جا رہی ہے:ملک انور تاج

  



شبقدر (نمائندہ خصوصی)ملک میں آزادی مارچ کے نام پر افراتفری پھیلانے کی کوشیش کی جا رہی ہیں۔ حکومت نے مختصر عرصے میں ملکی معیشت درست سمت لانے میں کامیاب ہو چکی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ممبر قومی اسمبلی و ممبر سٹنڈنگ کمیٹی انڈسٹریل اینڈ پروڈکشن ملک انورتاج نے شبقدر بحجرہ سابقہ ممبر ضلع کونسل محمد الیاس جان ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کی۔ اس موقع پر ممبر صوبائی عارف احمد زئی، سابقہ ممبر ضلع کونسل حاجی شاہد اللہ اور مقامی رہنماؤں عادل خان حلیم زئی، سابقہ تحصیل ناظم غفار اللہ شیخ سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا۔ ممبر قومی اسمبلی ملک انورتاج اور ممبر صوبائی اسمبلی عارف احمد زئی کہاکہ شبقدر کے عوام کی محرومی دور کرنے کیلئے کئی میگا پراجیکٹ پر ترقیاتی کام تیزی سے جاری ہے جبکہ سوئی گیس کی سہولت تمام علاقوں تک پہنچائی جائیگی انہوں نے کہا کہ سوئی گیس کے مختلف منصوبے جلد شروع ہونگے جس سے شبقدر میں کوئی ایک علاقہ بھی محروم نہیں رہے گا۔ شبقدر میں تعلیم، صحت اور مواصلات کے کئی منصوبے بھی جلد شروع ہونگے جس سے علاقے میں محروم علاقوں کی محرومی دور ہو گی۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سابقہ ممبر ضلع کونسل الیاس جان نے کہا کہ شبقدر کے عوام نے تحریک انصاف کے نمائندوں پر اعتماد کرکے علاقے کی ترقی و خوشحالی کیلئے راہ ہموار کر دی ہیں۔ تحریک انصاف کے منتخب نمائندے عوام کے اعتماد کو کسی صورت ٹھیس نہیں پہنچائی گی۔ اس موقع پر ممبر قومی اسمبلی ملک انور تاج اور ممبر صوبائی اسمبلی عارف احمد زئی نے شبقدر میں سوئی گیس منصوبے کا افتتاح کرتے ہوئے مزید کہا کہ شبقدر اور چارسدہ میں سوئی گیس کے مختلف منصوبوں کیلئے جلد اربوں روپے کی مزید فنڈز مختص کئے جارہے ہیں جس سے علاقے میں گیس لوڈشڈنگ اور کم پریشر کا مسئلہ مستقل بنیادوں پر حل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مولانا آزادی مارچ کے ذرئعے اسمبلی پہنچنا چاہتے ہیں۔ مولانا اسلام کارڈ استعمال کرتے ہوئے سیاسی فائدہ اٹھانے کی ناکام کوشیش میں مصروف ہیں۔ عوام کرپٹ اور مورثی سیاست کو دفنا چکی ہیں اب مزید اسلام کارڈ اور نعروں پر سیاست کا زمانہ نہیں رہا۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے ملک میں اسلامی روایات اور تشخص کیلئے سب سے بڑھ کر عملی اقدامات کئے ہیں۔ 

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...