کوکی خیل قوم نے جائیداد تنازع کے حل کیلئے 48گھنٹے کی ڈیڈ لائن دیدی

کوکی خیل قوم نے جائیداد تنازع کے حل کیلئے 48گھنٹے کی ڈیڈ لائن دیدی

  



پشا ور (سٹی رپورٹر)ضلع خیبر کی قوم کوکی خیل کے زیر یں فر یقین (کوز گوند) نے خیبر پختو نخوا حکومت سے اراضی تنازعے کے حل کیلئے اقدام اٹھا نے کا مطا لبہ کر د یا جبکہ اس سلسلے میں 48گھنٹے کی الٹی میٹم دیدی۔گزشتہ روز پشاور پر یس کلب میں نوابزادہ فضل کریم آفریدی کوکی خیل اور د یگر پر یس کانفر نس کر تے ہو ئے کہا کہ قوم کوکی خیل کے دو فر یق (کوز گوند اور بر گوند) کے ما بین گزشتہ روز تین روز سے اراضی پر تنازعے نے شد ت اختیار کر لی جبکہ  فر یقین کے مابین مسلسل تین د نو ں سے فا ئر نگ شروع ہیں تا ہم ضلعی پولیس اور انتظامیہ خاموش تما شا ئی بنی ہو ئی ہیں۔انہوں نے الزام لگا یا کہ بالا فر یقین سے پولیس نے بھار ی رشوت لے کر ان کا ساتھ د یں کر مذکور ہ اراضی پر ایک کمر ہ اور دیوار تعمیرکر ا دیا۔انہوں نے کہاکہ 1926سے ہما رے پا س جا ئیداد کے دستاویزات موجود ہے جبکہ ان کے ساتھ حد بند ی ہو ئی۔ اس سلسلے میں گزشتہ روز ڈی پی او خیبر سے با ت ہو ئی کہ متنا زعہ اراضی پر غیر قانونی طور پر تعمیر شدہ کمرہ اور دیوار کو مسمار کیا جا ئے،ڈی پی او کو کہنا تھا کہ دفعہ5 14میں ہم کسی بھی تعمیرات مسمار نہیں کیا جا تا ہے۔انہوں نے کہاکہ زیر یں فر یقین (کوز گوند) اور با لا فر یقین (برہ گوند) کے مابین ایک معا ہد ہ ہو اکہ کو ئی فر یق متنازعہ اراضی پر مداخلت نہیں کر یگا لیکن اس کے معا ہد ے کی خلاف ورز ی کر کے بر ہ گو ند نے کمر ہ اور دیوار تعمیر کرا یا جو کہ معا ہدے کی مکمل خلاف ورزی ہے۔انہوں نے وزیر اعلیٰ محمود خان، گو رنرشاہ فر مان، آ ئی جی پو لیس اور دیگراعلیٰ حکام سے نو ٹس لینے کا مطا لبہ کیا ہے کہ اگر ہما را تنازعہ کو حل نہ کیا گیا تو دو نو ں فر یقین کے مابین خون ریزی پھیلنے کا خد شہ ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...