نواز شریف کی طبیعت بدستور تشویشناک،پلیٹ لیٹس میں کمی جاری

نواز شریف کی طبیعت بدستور تشویشناک،پلیٹ لیٹس میں کمی جاری

  



لاہور،اسلام آباد (جنرل رپورٹر، سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کی طبیعت بدستور تشویشناک ہے، شریف فیملی نے نواز شریف کو آئندہ دو روز میں لندن لے جانے کا فیصلہ کر لیا ہے،جس کیلئے انتظامات مکمل ہیں، شہباز شریف سمیت دیگر فیملی ممبران بھی ہمراہ جائیں گے۔نیب نے نواز شریف کو وطن واپسی کی ضمانت دینے پر نام ای سی ایل سے نکالنے پر آمادگی ظاہر کر دی۔چیئرمین نیب نے ہیڈ کوارٹرز میں مصروف دن گزار ا اورنوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کیلئے درخواست پر فیصلہ کیا،ای سی ایل سے نوازشریف کا نام نکالنے سے متعلق وزارت داخلہ کو آگاہ کردیا جائیگا۔ ذرائع کے مطابق نواز شریف 19روز سے پلیٹ لیٹس کی کمی کے سنگین نوعیت کے عارضہ میں مبتلا ہیں اور تاحال ان کے پلیٹ لیٹس بار بار گرنے کی وجہ کا سراغ نہیں لگایا جاسکا۔ سروسز ہسپتا ل میں ان کے علاج پر مامور میڈیکل بورڈ کی جانب سے نواز شریف کی فوری جنیٹک سٹڈی کروانے کیلئے کہا گیا تھا تاکہ بون میرو کے خود سے پلیٹس لیٹس نہ بنانے کی تشخیص ہوسکے اور اس کا علاج کیا جاسکے۔ تاہم جنیٹک ٹیسٹوں کی سہولت پاکستان میں دستیاب نہ ہونے پر ان کا علاج ممکن نہیں، نواز شریف 3روز سے اپنے گھر میں قائم آئی سی یو میں زیر علاج ہیں جہاں ان کی طبیعت بتدریج بگڑ رہی ہے اور تمام تر علاج کے باوجود پلیٹ لیٹس کم ہورہے ہیں۔ نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے بھی ان کی صحت کو تشویشناک قرار دیدتے ہوئے کہا تمام تر علاج کے باوجود پلٹ لیٹس مستحکم نہیں ہورہے۔  ذرائع کے مطابق نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان اور شریف میڈیکل کمپلیکس کے ڈاکٹروں پر مشتمل میڈیکل بورڈ نے گزشتہ روز بھی سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کا تفصیلی طبی معائنہ کیا۔ ذرائع کے مطابق نواز شریف کے پلیٹ لیٹس کی تعداد میں اچانک کمی ہوئی ہے اور یہ تعداد18ہزار کی سطح پر آگئی ہے۔ ڈاکٹروں نے شہباز شریف اور مریم نواز سے بھی تفصیلی مشاورت کی اور نواز شریف کی صحت کے پیش نظر کمرشل،چارٹرڈ فلائٹ اور ائیر ایمبولینس کے آپشنز پر غور کیا گیا۔ ائیر ایمبولینس کے استعمال کی صورت میں قطر میں ائیر ایمبولینس کے حصول کیلئے بات چیت کر لی گئی ہے اورحتمی طو رپر طے ہونے کی صورت میں ائیر ایمبولینس فوری پاکستان پہنچ جائیگی ۔ آج اتوار تک ان کو بیرون ملک لے جایا جائیگا۔ادھر نیب نے نواز شریف کو وطن واپسی کی ضمانت دینے پر نام ای سی ایل سے نکالنے پر آمادگی ظاہر کر دی۔ نوازشریف کانام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈجاوید اقبال نیب ہیڈ کوارٹرز پہنچے، درخواست پر قانونی پہلوؤں کا جائزہ لینے کیلئے پراسیکیوٹر جنرل نیب اور لیگل ٹیم کو طلب کر لیا،چیئرمین نیب نے ہیڈ کوارٹرز میں مصروف دن گزار ا اورنوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کیلئے درخواست پر فیصلہ کیا،ای سی ایل سے نوازشریف کا نام نکالنے سے متعلق وزارت داخلہ کو آگاہ کردیا جائیگا،نوازشریف کی تشویش ناک صحت کے پیش نظر نیب نے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے پر آمادگی ظاہر کی،نواز شریف سے وطن واپسی کی ضمانت لی جائیگی۔نواز شریف سے متعلق فیصلہ چیئرمین نیب کی زیر صدرات اجلاس میں کیا گیا،نیب اپنے فیصلے سے وزرات داخلہ کو آگاہ کر دے گا،نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کیلئے شہباز شریف کی جانب سے چیئرمین نیب کو بھی درخواست دی گئی تھی۔دوسری طرف مسلم لیگ (ن) کے رہنما راؤ شہاب الدین کی جانب سے جاتی امراء کے باہر نواز شریف کی صحتیابی کیلئے دو بکروں کا صدقہ دیا گیا۔ اس موقع پر پارٹی قائد کی صحتیابی اور درازی عمر کی دعا بھی کی گئی۔

نواز شریف

مزید : صفحہ اول


loading...