پیدائش کے پہلے گھنٹے ماں کا دودھ انتہائی ضروری ہے، ڈاکٹر مظہراقبال

  پیدائش کے پہلے گھنٹے ماں کا دودھ انتہائی ضروری ہے، ڈاکٹر مظہراقبال

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)ڈسٹرکٹ عمر کوٹ میں ایکسیلیریٹڈایکشن پلان فار اسٹنٹنگ اینڈ میل نیوٹریشن، سندھ کے تحت خصوصی میٹنگ کا انعقاد کیا گیا، ڈپٹی کمشنر آفس میں ہونے والی میٹنگ بنام”ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن کمیٹی فار نیوٹریشن“ کا بنیادی مقصد ملٹی سیکٹورل اپروچ کے زریعے ضلعے میں نیوٹریشن پر مبنی کثیرالجہتی مقاصد کاحصول ہے۔ میٹنگ میں ہیلتھ،ایجوکیشن، بہبود آبادی، فشریز،لائیواسٹاک و دیگر حکومتی اور نجی اداروں کے نمائندگان نے شرکت کی۔ میٹنگ کے آغاز میں NSPکی جانب سے تعینات ڈسٹرکٹ نیوٹریشن آفیسر ڈاکٹر محبوب نے اپنی پریزینٹیشن کے زریعے شرکاء کو عمرکوٹ میں نیوٹریشن سے متعلق اہم معلومات سے آگاہ کیا۔ یونیسیف کے ڈاکٹر مظہراقبال نے ”اسٹنٹنگ“ اور ”واسٹنگ“ کے موضوع پر سیر حاصل گفتگو کی اور اہم سوالات کے جوابات دئیے۔ ایکسیلیریٹڈ ایکشن پلان ٹاسک فورس کی جانب سے شوکت سیٹھیو نے ”AAP“ کا تفصیلی تعارف پیش کیا۔ سامی فاؤنڈیشن سے تعلق رکھتے سریش کمارنے گاؤں،دیہاتوں کو ”اوپن ڈیفیکشن فری“ بنانے کے حوالے سے معلومات فراہم کیں۔ ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن آفیسر ایپ، کاشف شمیم صدیقی کا کہنا تھاکہ میل نیوٹریشن جیسے حساس مسئلے پر قومی اور بین القوامی اداروں کے مابین موثر اشتراک اور عملی اقدامات قابل ِتعریف ہیں۔ PPHI، ورلڈفوڈ پروگرام، Server4Sale اور شفاء فاؤنڈیشن کے نمائندگان نے بھی اپنے،اپنے خیالات کا اظہار کیا۔میٹنگ کے اختتام پر ڈپٹی کمشنر، ندیم الرحمن میمن کا کہنا تھا کہ پروجیکشن کے بغیر کارکردگی کی پیمائش ممکن نہیں، مل جُل کر کام کرنے سے ہی بہتری آسکتی ہے، دوسری جانب ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر، حق نواز نے ایپ پروگرام کو سراہتے ہوئے DCCN کے انعقاد کووقت کی اہم ضرورت قراردیا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...