امن کو نقصان پہنچاتو ذمہ دار بھارت ہو گا ، اقوام متحدہ کردار ادا کرے :شہباز شریف

امن کو نقصان پہنچاتو ذمہ دار بھارت ہو گا ، اقوام متحدہ کردار ادا کرے :شہباز ...

    لاہور،سیالکوٹ، بھکر،پسرور، (بیو رو رپورٹ +نمائندگان )وزےراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشرےف نے سیالکوٹ اور پسرور کے سرحدی علاقوں کا دورہ کیا اور بھارتی فائرنگ کے نتیجہ میں شہید ہونے والے شہریوں کے لواحقین میں مالی امداد کے چیک تقسیم کئے اور اس سے پیشر وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے سی ایم ایچ سیالکوٹ کا دورہ کیا اور زخمی ہونے والے شہریوں کی عیادت کی-وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے چارواہ سیکٹر کے سرحدی علاقوں کے دورے کے موقع پر عوام کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ نہتے، پرامن اور معصوم شہریوں پر بھارت کی بلا اشتعال فائرنگ قابل مذمت ہے-بھارت کی جارحیت کے باعث خطے میں کشیدگی میں اضافہ ہورہا ہے جس کے لئے اقوام متحدہ کوفوری نوٹس لیتے ہوئے اپنا کردارادا کرناچاہےے اور بھارت کو بھی اپنے طرز عمل میں تبدیلی لانا ہوگی - انہوں نے کہاکہ پاکستان ایٹمی طاقت ہے اور وہ ہر قسم کی جارحیت کاجواب دےنے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے - مادروطن کے لئے جان دےنے والے نوجوانوں ،ماﺅں اور بزرگوں کا خون رائےگاں نہیں جائے گا-وزیراعلیٰ نے کہاکہ بھارت فوری طو رپر ننگی جارحیت بند کرے،بھارتی وزیراعظم اور ان کی قیادت ہوش کے ناخن لے -انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ خطے میں کشیدگی کو بڑھنے سے روکنے کے لئے فوری اقدامات اٹھائے ،امن کو نقصا ن پہنچانے کا ذمہ داربھی بھارت ہوگا- انہوں نے کہا کہ پوری قوم بھارتی بربریت کی مذمت کرتی ہے- 18کروڑ عوام پاکستان کی بہادر افواج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں-بھارت کو نہیں بھولنا چاہےے کہ پاکستان نوازشریف کی قیادت میں 28مئی 1998 کو ایٹمی طاقت بن چکاہے -18کروڑ عوام اور پاکستان کی بہادر مسلح افواج بھارتی جارحیت کا جواب دیں گے - وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے چارواہ سیکٹرمیںبھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ سے شہید ہونے والے شہریوں کے لواحقین کو مالی ا مداد کے چیک دئےے-قبل ازیں وزیراعلیٰ نے سی ایم ایچ سیالکوٹ میں بھارتی فوج کی فائرنگ کے نتیجہ میں زخمی ہونے والے شہریوں کی عیادت کی - قبل ازیںوزیراعلیٰ شہباز شریف نے مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں اور عوام سے اپیل کی ہے کہ تحریک انصاف کی طرف سے کی جانے والی اشتعال انگیزیوں کے باوجود صبر اور تحمل کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑیںاور برداشت سے کام لیں-وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اپنی اپیل میں کہاکہ انہیں ملتان کے واقعہ پر افسوس ہواہے لیکن دنیا جانتی ہے کہ تحریک انصاف کی قیادت اور اس کے حامیوں نے گزشتہ کئی ماہ سے جلسے ، جلوسوں اور ٹیلی ویژن چینلز پر ایک ساز ش کے تحت انتہائی اشتعال انگیز، بہتان طرازی اور گالم گلوچ پر مبنی زبان ا ستعمال کی اور ایک سازش کے تحت ملک میں امن عامہ کی صورتحال خراب کر کے پاکستان کی ترقی او ر جمہوری عمل کو نقصان پہنچایا ہے -علاوہ ازیںلاہور سمےت پنجاب بھر مےں انسداد ڈےنگی کےلئے وضع کردہ پلان پر موثر عملدر آمدکی ہداےت کی ہے۔شہبا زشریف نے کہا کہ انسانی جان سے قیمتی کوئی چیز نہیں، انسانی جانو ںکے تحفظ کیلئے تمام ضروری وسائل بروئے کار لائے جائیں۔وزےراعلیٰ نے ہداےت کی کہ ڈینگی کے مریضوں کی ہسپتالوں میں بہترین نگہداشت کی جائے اور آﺅٹ ڈور کے ساتھ ان ڈور سرویلنس پر خصوصی توجہ دی جائے۔مزید برآںوزےراعلیٰ پنجاب بھکر مےں مسلم لےگ(ن) کے اےم پی اے نجےب اللہ خان نےازی مرحوم کی رہائش گاہ پر گئے اورنجیب اﷲ خان نیازی کے انتقال پر لواحقےن سے تعزےت کااظہار کےا ۔ وزےراعلیٰ نے مرحوم کی روح کے اےصال ثواب کےلئے دعائے مغفرت کی۔اس موقع پر وزیراعلیٰ نے کہا کہ ایم پی اے نجیب اﷲ خان نیازی مرحوم کی ساری سےاسی زندگی خدمت خلق سے عبارت تھی۔ نجےب اللہ خان نےازی مرحوم نے جمہورےت اورمسلم لےگ (ن) کےلئے گراں قدر خدمات سرانجام دیں۔دریں اثنا وفاقی وزیر سائنس وٹیکنالوجی زاہد حامد خان نے بھی ایک روز قبل پسرور کے سرحدی دیہات دھمالہ ،تلسی پور اور اکھنور کا دورہ کیا انہوں نے بھارتی فورسز کی فائرنگ سے ہلاک وزخمی ہونے والے افراد کے اہل خانہ سے ملاقات کی اور انہیں یقین دلایا کہ حکومت متاثرین کی ہر ممکن مالی امداد کرے گی انہوں نے کہا کہ جن متاثرین کو بھارتی فائرنگ اور شیلنگ کی وجہ سے نقل مکانی کرنی پڑی ہے امن قائم ہوتے ہی وہ جلد اپنے گھروں میں واپس آجائیں گے وفاقی وزیر نے موضع ننگلیاں کا بھی دورہ کیا اور سابق کونسلر ملک محمد رفیق سے ملاقات کی اس موقع پر سابق ناظم کلاسوالہ رانا زاہد حسین ،سابق ممبر زکواة کمیٹی سیالکوٹ رانا اعجاز احمد آف بوڑیکے اورن لیگ کے رہنما غلام عباس المعروف بوٹا گجر بھی موجود تھے ۔رکن صوبائی اسمبلی رانا لیاقت علی آف بھلور اور اے سی پسرور توقیر الیاس چیمہ نے بھی متاثرہ دیہات کا دورہ کیا ۔ ا س موقع پر وزیراعلی کے مشیر زعیم قادری، ایم این اے ارمغان سبحانی راکین صو بائی اسمبلی منشاءاللہ بٹ، چودھری اکرام ، محسن اشرف، ارشدجاوید وڑائچ اور رانا لیاقت علی، آرمی افسران اور ضلعی انتظامیہ کے افسران بھی شریک تھے۔

مزید : صفحہ اول