محمود الرشید کی ڈی ایچ اے میں گارڈز کے ہاتھوں قتل ہونیوالے نوجوان کی نماز جنازہ میں شرکت

محمود الرشید کی ڈی ایچ اے میں گارڈز کے ہاتھوں قتل ہونیوالے نوجوان کی نماز ...

لاہور( نمائندہ خصوصی)قائد حزب اختلاف پنجاب میاں محمود الرشید نے ڈی ایچ اے میں گارڈز کے ہاتھوں قتل ہونیوالے نوجوان طاہر ملک کی نماز جنازہ میں شرکت کی اور واقعہ کو ظلم اور بربریت کی انتہا قرار دیا، انہوں نے مقتول نوجوان کے والد محمد تنویر کے ہمراہ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ قتل کے اس واقعہ کا خود نوٹس لیں ،روزانہ کی بنیاد پر اس کیس کی سماعت کو یقینی بنائیں اور ذمہ داروں کو پھانسی پر لٹکا یا جائے، اس موقع پر مقتول نوجوان طاہر ملک کے والد نے نمناک آنکھوں کے ساتھ میڈیا کے نمائندوں سے سوال کیا ”کیا مجھے انصاف ملے گا “میرا ،میرے اہلخانہ اور میرے نوجوان بیٹے کا آخر قصور کیا تھا؟ میاں محمود الرشید مقتول کے والد محمد تنویر سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے آبدیدہ ہو گئے اور کہا کہ اگر اس خون ناحق کو دبانے کی کوشش کی گئی تو لاہور کی اینٹ سے اینٹ بج جائے گی،

جنازہ میں شرکت

مزید : صفحہ آخر