2017میں 2.29ملین ٹن چاول بر آمد ، 1.06ارب ڈالر ز رمبادلہ کمایا ، صوبائی وزیر زراعت

2017میں 2.29ملین ٹن چاول بر آمد ، 1.06ارب ڈالر ز رمبادلہ کمایا ، صوبائی وزیر زراعت

  



لاہور (کامرس رپورٹر) محکمہ زراعت پنجاب نے دھان کے کاشتکاروں کی آگاہی کیلئے ضلع گوجرانوالا میں سیمینار کا انعقاد کیا جس میں وزیر زراعت پنجاب ملک نعمان احمد لنگڑیال نے بطور مہمانِ خصوصی شرکت کی۔سیمینار میں بینش فاطمہ ساہی ایڈیشنل سیکرٹری(ٹاسک فورس)،ڈاکٹر عابد محمود ڈائریکٹر جنرل زراعت(ریسرچ)،سید ظفریاب حیدر ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع)،ڈاکٹر محمد اختر ڈائریکٹر رائس کالا شاہ کاکو ،رائے مدثر عباس ڈپٹی ڈائریکٹر نظامت زرعی اطلاعات سمیت محکمہ زراعت پنجاب کے دیگر اعلیٰ افسران و کاشتکاروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر وزیر زراعت پنجاب ملک نعمان احمد لنگڑیال نے سیمینار کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دھان ایک اہم نقد آور فصل ہے۔ یہ فصل ہماری غذائی ضروریات پوری کرنے کے ساتھ ساتھ برآمدات کے ذریعے زرمبادلہ کمانے میں بھی اہم کردار ادا کرتی ہے۔ پاکستانی باسمتی چاول اپنی خوشبو اور کوالٹی کی وجہ سے پوری دنیا میں پسند کیا جاتا ہے۔ پاکستان دنیا میں چاول برآمد کرنے والے ممالک میں اہم مقام رکھتا ہے۔آپ کو یہ جان کر خوشی ہوگی کہ ہمارے محنتی و جفاکش دھان کے کاشتکاروں کی بدولت مالی سال 2017-18 کے دوران 2.29 ملین ٹن چاول برآمد کئے گئے جس سے1.06 ارب ڈالر زرمبادلہ کمایا گیا۔ ہم اپنے دورِ اقتدار میں کسانوں کی فلاح کو ملحوظِ خاطر رکھتے ہوئے زراعت کے نظام میں بنیادی تبدیلیاں لانے کیلئے بہت سے پروگرام متعارف کروا رہے ہیں۔ہمیں احساس ہے کہ کاشتکار طبقہ کو گذشتہ دورِ حکومت میں بہت زیادہ محرومیوں کا سامنا کرنا پڑا ہے اور انہیں خاطرخواہ توجہ سے محروم رکھا گیا ہے جس کا نتیجہ یہ نکلا ہے کہ زراعت اور کسان دنیا کی ترقی کی دور میں پیچھے رہ گئے اور حتی ٰ کہ ہمسایہ ملک بھی ہم سے آگے زرعی میدان میں نکل گئے۔ہماری حکومت وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق زرعی شعبہ کو اتنا فعال اور ترقی یافتہ بنادے گی کہ ہماری زراعت بین الاقوامی تقاضوں سے ہم آہنگ ہو کر مقامی اور بین الاقوامی مارکیٹ دونوں جگہ نمایاں مقام حاصل کرسکے گی۔آنے والے دنوں میں ہماری متعارف کراوائی گئی سکیمیں کاشتکاروں کے مسائل میں کافی حد تک کمی کا باعث بنیں گی ۔سیمینار سے دیگر زرعی ماہرین نے بھی خطاب کیا اور اس موقع پر سید ظفریاب حیدر ڈائریکٹر جنرل زراعت(توسیع) نے کاشتکاروں سے اپیل بھی کی کہ فضائی آلودگی کو مدِ نظر رکھتے ہوئے کاشتکار دھان کے مڈھوں کو آگ نہ لگائیں کیونکہ اس سے زمین کی زرخیزی میں کمی واقع ہوتی ہے اور فضائی آلودگی میں اضافہ ہوتا ہے جو انسانی زندگی کیلئے نقصان دہ ہے ۔امسال محکمہ زراعت کی ٹیمیں دھان کو آگ لگانے والے واقعات کی بھی مانیٹرنگ کر رہی ہیں لہٰذا دھان کے مڈھوں کی تلفی کیلئے محکمہ زراعت کے مقامی عملے کے مشورہ سے کریں تاکہ ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ نہ ہو۔

مزید : کامرس