تھر کے عوام کیلئے وفاقی حکومت نے کوئی مدد نہیں کی،مرتضیٰ وہاب

تھر کے عوام کیلئے وفاقی حکومت نے کوئی مدد نہیں کی،مرتضیٰ وہاب

کراچی (این این آئی) وزیراعلی سندھ کے مشیر برائے اطلاعات ، قانون و اینٹی کرپشن بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ صدر مملکت اور وزیراعظم کے نوٹس کے باوجود تھر کے عوام کے لئے وفاقی حکومت نے کوئی مدد نہیں کی، سندھ حکومت اپنی مدد آپ کے تحت تھر کے عوام کی مدد کررہی ہے پی ٹی آئی حکومت کے پاس معاشی اور معاشرتی پلان نہیں عمران خان نے کہا تھا کہ آئی ایم ایف کے پاس نہیں جاونگا اب وہ خود فیصلہ کریں حکومت نے بڑی بڑی باتیں کرنے اور یوٹرن کے سوا کچھ نہیں کیا تحریک انصاف کی پالیسیز سے ظاہر ہوگیا کہ وہ کتنے سنجیدہ ہیں پی ٹی آئی صرف مہنگائی اور گیس وبجلی قیمتوں میں اضافے کا طوفان لائی یہ بات انہوں نے منگل کو اپنے دفتر میں نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ رجسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ وزیراعلی سندھ کی ہدایت پر تھر کا دورہ کرکے وہاں کے حالات کا جائزہ لیا ہے آر او پلانٹس سے لیکر اسپتالوں، بنیادی صحت کے مراکز، گندم زخیرہ کرنے کے لئے مختلف گوداموں، علاقہ مکینوں سے صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ زمینی حقائق کا جائزہ لیا ہمارے دورے کے دوران تھرپارکر سے منتخب رکن سندھ اسمبلی قاسم سراج سومرو اور دیگر بھی تھے۔ انہوں نے کہا کہ مروجہ طریقہ کار کے تحت پندرہ اگست تک بارشیں نہ ہوں تو تھر کو قحط زدہ قرار دیا جاتا ہے سندھ حکومت نے تھر کو بروقت علاقے کو قحط زدہ قرار دیا اور گندم تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا تاکہ تھر کے لوگوں کو ریلیف مل سکے۔ نادرا سے ریکارڈ منگوا کر دو لاکھ آٹھ ہزار دو سو چھیالیس گھرانوں کو گندم تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا۔ تھر کے لوگوں سے مل کر معلوم ہوا کہ دو لاکھ اسی ہزار گھرانوں کو گندم تقسیم کی جائے۔

مزید : صفحہ آخر