دماغ کی ’’لاشعوری کارکردگی‘‘ اور یادداشت میں بہتری کیلئے قیلولہ کیجیے

دماغ کی ’’لاشعوری کارکردگی‘‘ اور یادداشت میں بہتری کیلئے قیلولہ کیجیے

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک دہائی کی تحقیق کے بعد ہم جان چکے ہیں کہ نیند دماغی کارکردگی اوراعصابی سکون کے لیے انتہائی اہم ہوتی ہے لیکن دن میں کچھ دیر کی نیند ایک جانب تو دل اور اعصاب کو بہتر حالت میں رکھتی ہے تو جاگتے میں حاصل ہونے والی معلومات، نیند کے ذریعے یادداشت کی گہرائی میں ثبت ہوتی جاتی ہیں۔2016 میں ماہرین نے اسی مفروضے کی بنیاد پر ایک سروے کیا تھا۔ اس سروے کا خلاصہ یہ تھا کہ امتحانات کی تیاری کرنے والے افراد پڑھتے وقت دن کے اوقات میں قیلولہ کریں تو اس سے سبق اچھی طرح یاد رہتا ہے اور یادداشت بہتر ہوتی جاتی ہے۔اب یونیورسٹی آف برسٹل کے ماہرین نے کہا ہے کہ دن اور خصوصاً دوپہر میں قیلولہ کرنے سے ہمارا دماغ وہ معلومات بھی پروسیس کرتا ہے جو ہم لاشعوری طور پر ہر طرف سے حاصل کررہے ہوتے ہیں۔ سادہ الفاظ میں دن کا قیلولہ ہماری مسائل حل کرنے کی قوت کو بھی بڑھاتا ہے۔

مزید : صفحہ آخر