ریونیو بورڈپرائیویٹ ہاؤسنگ سکیموں سے اشٹام پیپرز کی مد میں رقوم اکٹھی کرنے میں ناکام

ریونیو بورڈپرائیویٹ ہاؤسنگ سکیموں سے اشٹام پیپرز کی مد میں رقوم اکٹھی کرنے ...

لاہور(عامر بٹ سے)بورڈ آف ریونیو پنجاب کے اعلیٰ افسران لاہور بھر کی پرائیویٹ ہاؤسنگ سکیموں سے سی وی ٹی اور اشٹام پیپرز کی مد میں کروڑوں روپے کی رقوم اکٹھی کرنے میں ناکام ہو گئے 600 سے زائد پرائیویٹ ہاؤسنگ سکیموں کے مالکان نے سی وی ٹی اور اشٹام ڈیوٹی ٹیکس کی ادائیگی کے علاوہ اپنی ہاؤسنگ سکیموں میں سرکاری زمینوں کو شامل کر کے بھی اربوں روپے کا فائدہ حاصل کیا ہے جس پر بورڈ آف ریونیو کے اعلیٰ افسران کے حکم پر سرکاری زمینوں کو ہاؤسنگ سکیموں میں شامل کر کے فروخت کرنے والے ڈویلپرز کو بار بار انویسٹرز بھی بجھوائے گئے اور ڈپٹی کمشنر لاہور کو ان ڈویلپرز سے سرکاری زمینوں کے عوض بننے والی اربوں روپے کی رقوم اکٹھی کرنے کے ٹاسک بھی دئیے گئے تاہم نہ تو سی وی ٹی اور اشٹام ڈیوٹی ٹیکس اکٹھے کئے جا سکے اور نہ ہی سرکاری زمینوں کے عوض موجودہ ویلیو کے مطابق عائد کئے جانے والی رقوم ہاؤسنگ سکیموں کے مالکان سے نکلوائی جا سکی۔ تاہم ڈپٹی کمشنر لاہور کے ترجمان کا کہنا ہے کہ آئندہ ایک ماہ کے دوران جن ہاؤسنگ سکیموں میں کیپٹل ویلیو ٹیکس نہیں درج کروائے اور اشٹام ڈیوٹی کی مد میں جعلی اشٹام پیپرز استعمال کرتے ہوئے حکومتی خزانے کو نقصان پہنچایا ہے ان کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا عندیہ دیدیا ہے جلد روزنامہ پاکستان کی نشاندہی پر بڑے پیمانے پر آپریشن کا آغاز کریں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1