راولپنڈی ، این اے 60 ضمنی الیکشن ، ن لیگ ، پی ٹی آئی میں کانٹے دار مقابلے کا امکان

راولپنڈی ، این اے 60 ضمنی الیکشن ، ن لیگ ، پی ٹی آئی میں کانٹے دار مقابلے کا ...

راولپنڈی(سٹی رپورٹر) راولپنڈی کے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 60میں ہونے والے ضمنی انتخاب کی انتخابی مہم عروج پر پہنچ گئی، اس حلقے میں ملک کی دو سیاسی اورایک مذہبی سیاسی جماعت کے انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کے راشد شفیق اور پاکستان مسلم لیگ(ن) کے سجاد خان تحریک لبیک کے زاہد عقیل بھر پور طریقے سے اپنی انتخابی مہم چلا رہے ہیں پاکستان مسلم لیگ(ن) کا پاکستان پیپلز پارٹی کے ضمنی الیکشن کی حد انتخابی اتحاد ہوا ہے لیکن پاکستان پیپلز پارٹی کے عہدیدار و کارکن سجاد خان کی انتخابی مہم میں کہیں نظر نہیں آرہے اور سجاد خان اپنے سابقہ تحصیل نائب ناظم کے دور کے ناظمین و نائب ناظمین،کونسلر اور موجودہ چیئرمین و وائس چیئرمین اور کونسلرز کے ہمراہ بھر پور طریقے سے انتخابی مہم چلا رہے ہیں وہ پورا دن رات گئے تک شہر کے مختلف علاقوں میں ڈور ٹو ڈور جا کر ووٹرز سے ملاقات کر رہے ہیں،انتخابی مہم کے دوران وہ تحریک انصاف کی بھر پور مخالفت کرتے ہوئے موجودہ حکومت کی جانب سے کئے اقدامات کو عوام سامنے رکھتے ہیں،مہنگائی،غربت،افلاس اور دیگر امور پر وہ کھل کر اپنے نقطہ نظر بیان کرتے ہیں جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے نامزد امیدوار شیخ راشد شفیق کی انتخابی مہم کے دوران تحریک انصاف کے راولپنڈی کے سرکردہ راہنما کہیں نظر نہیں آتے اور نہ ہی تحریک انصاف کے کارکن انتخابی مہم کے دوران شیخ راشد شفیق کے ہمراہ ہوتے ہیں البتہ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد خفیہ طریقے سے پورے حلقے میں جا کر بھر پور طریقے سے انتخابی مہم چلا رہے ہیں اور اپنے دیرینہ دوستوں رابطے بھی کر رہے ہیں اگر اس حلقے میں پاکستان تحریک انصاف امیدوار شیخ راشد شفیق کو شکست ہوئی تو اس کے ذمہ دار تحریک انصاف کے عہدیدار اور کارکنان ہوں گے،شیخ راشد شفیق کی انتخابی مہم کے دوران تحریک انصاف کی طرف سے این اے60میں کوئی بڑا جلسہ بھی نہیں کیا گیا کہ جس میں پاکستان تحریک انصاف کا کوئی سرکردہ راہنما آیا ہو جبکہ تحریک لبّیک پاکستان کے کارکنان و قائدین اپنے امیدوار راجہ زاہد عقیل کی بھر پور انتخابی مہم چلا رہے ہیں اسی سلسلے میں گزشتہ ہفتے تحریک لبّیک کے سربراہ مولانا خادم حسین رضوی اس انتخابی مہم میں جوش و خروش پیدا کرنے کیلئے پورے حلقہ کا دورہ کیا اور ایک بڑی ریلی کی قیادت بھی کی اور این اے60کی ایک جامع مسجد میں خطبہ جمعہ بھی دیا جوشیلی تقریر میں انہوں نے کہا کہ این اے60کی غیور عوام پاکستان و تحریک لبّیک کے امیدوار کو بھر پور طریقے سے کامیاب کرا کے ناموس رسالت حق ادا کرینگے تاہم اصل مقابلہ پاکستان مسلم لیگ(ن) اور پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں کے درمیان ہی ہو گا لیکن تحریک لبّیک بھی اس حلقے میں بہت بڑا ووٹ بینک رکھتی ہے،اصل صورتحال 14اکتوبر کی شام کو ہی نظر آئے گی اس حلقے کا ایم این اے کون ہو گا؟

مزید : کراچی صفحہ اول