موجودہ قانو آئس کا احاطہ نہیں کر سکتی ، قانون سازی ناگزیر ہے : جاوید اقبال

موجودہ قانو آئس کا احاطہ نہیں کر سکتی ، قانون سازی ناگزیر ہے : جاوید اقبال

پشاور(کرا ئم رپورٹر)آئس کے خلاف جاری جہاد میں طلباء محکمہ پولیس کے ساتھ شانہ بہ شانہ لڑ تے ہوئے اپنا کردار ادا کریں طلباء اس عظیم مقصد کے لئے اپنی توانائیاں سرف کریں موجودہ قانون آئس کا احاطہ نہیں کر سکتی لہذا آئس فروشوں کو قرار واقعی سزا دلوانے کے لئے صوبائی حکومت قانون سازی کر رہی ہے آئس کے خلاف جاری کیمپین میں اب 177 افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے جن سے 12 کلو گرام سے زائد آئس برآمد کی گئی ہے ان خیالات کا اظہار ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال نے گزشتہ روز نجی تعلیمی ادارے میں آئس کے روک تھام کے حوالے سے منعقدہ خصوصی سیمینارکے دوران طلباء طالبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا تفصیلات کے مطابق پشاور پولیس نے آئس کے خلاف جاری مہم کے تحت مختلف تعلیمی اداروں میں سیمینارز کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جس میں گزشتہ روز نجی تعلیمی ادارے سٹی یونیورسٹی میں سیمینار اور واک کا اہتمام کیا گیا تھا سیمینار میں وائس پریذیڈنٹ سٹی یونیورسٹی ڈاکٹر محمد اسرار خٹک ، ایچ او ڈی سول انجنئرنگ محبوب عالم اورایچ او ڈی ایجوکیشن و ڈین بریگیڈئیر محمد یونس سمیت طلباء و طالبات نے کثیر تعداد میں شرکت کی سیمینار کے دوران ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال نے آئس اور اس کے پس منظر پر سیر حاصل گفتگو کی جبکہ حاضرین کو آئس کے استعمال سے ہونے والے نقصانات کے بارے میںآگاہ کیا انہوں نے کہا کہ نوجوان باالعموم اور طلباء بالخصوص ہمارے ملک و قوم کا مستقبل ہے انہوں نے واضح کیا کہ طلباء اور نوجوان نسل کو منشیات اور آئس سے محفوظ رکھنا اولین ترجیح ہے تقریب کے دوران اپنے خطاب کے دوران ایس ایس پی آپریشن نے کہا کہ تعلیمی اداروں کے اردگرد آئس کا دھندہ کرنے والے نیٹ ورک کوتوڑ دیا گیا ہے جبکہ مختلف تھانوں کی حدود میں بھی متعدد کامیاب کارروائیوں کے دوران 177افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے جن کے قبضے سے 12 کلو گرام سے زائد آئس برآمد کر لی گئی ہے اس کے علاوہ پرائیویٹ ہاسٹلز میں بھی آئس کے خلاف کارروائیاں کی گئیں ہیں انہوں نے واضح کیاکہ پشاور پولیس کی موثر کارروائیوں کی بدولت ضلع خیبر سے آپریٹ کرنے والے گروہ کو گرفتار کر لیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ آئس کے خلاف صوبائی حکومت موثر قانون سازی کر رہی ہے جبکہ آئس میں مبتلا افراد کی بحالی کے لئے بھی دو ادارے کام کر رہے ہیں سٹی یونیورسٹی کے ایچ او ڈی سول انجنئرنگ محبوب عالم نے پشاور پولیس کے اقدام کو سراہتے ہوئے واضح کیا کہ طلباء کواس طرح کے سیمینارزکے ذریعے زیادہ بہتر آگاہی حاصل ہو سکے گی بریگیڈئیر محمد یونس نے پشاور پولیس کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے واضح کیا کہ طلباء اور سٹی یونیورسٹی کے فیکلٹی ممبران آئس کے خلاف پشاور پولیس کا ساتھ دیں گے اور پولیس کے شانہ بہ شانہ آئس کے خاتمہ کے لئے کام کریں گے اس موقع پروائس پریذیڈنٹ سٹی یونیورسٹی ڈاکٹر محمد اسرار خٹک کی طرف سے ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال اور ایس پی سٹی شہزادہ کوکب فاروق کواعزازی شیلڈزبھی پیش کئے گئے سیمینار کے بعد شرکاء نے خصوصی آگاہی واک میں بھی حصہ لیا جس کے دوران طلبا ء وطالبات نے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر آئس کے خلاف نعرے درج تھے

مزید : پشاورصفحہ آخر