ضلع مہمند کے مائنز کاروبار سے وابستہ لوگوں کے مسائل حل کرنے کیلئے مشترکہ جرگہ

ضلع مہمند کے مائنز کاروبار سے وابستہ لوگوں کے مسائل حل کرنے کیلئے مشترکہ ...

مہمند ( نمائندہ پاکستان) ضلع مہمند کے مائنز کاروبار سے وابستہ لوگوں کے مسائل حل کرنے کیلئے مشترکہ جرگہ۔ جرگے میں منتخب ممبر قومی اسمبلی کو معدنیات کے متعلق مسائل سے آگاہ کیا۔ مائنز کاروباری حلقہ کے مسائل قومی اسمبلی فورم اور حکومت کے ایوانوں میں اُٹھانے کا فیصلہ۔ ضلعے میں مائنز کے کاروبار میں خلل ڈالنا برداشت نہیں کرینگے۔ ٹھیکداروں کو سازگار ماحول مہیا کیا جائے۔ تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع مہمند کے مائنز کاروبار سے وابستہ افراد نے ضلع میں معدنیات سے متعلق کاروباری طبقے کے مشکلات اور مسائل کے حل کے بارے میں ممبر قومی اسمبلی سے گرینڈ جرگہ ہوا۔ جس میں ٹھیکداروں کو درپیش مسائل رکن قومی اسمبلی کے سامنے پیش کئے۔ ٹھیکداروں کا کہنا تھا کہ مائنز کے حوالے سے خود ساختہ پالیسیوں کو فوری طور پر بند کیا جائے۔ ٹھیکداروں کو دفاتروں کے چکروں سے آزاد ی دلایا جائے۔ اور انہیں سازگار ماحول مہیاں کیا جائے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ضلع مہمند میں بھی بونیر کی طرح EL-2 لائسنز ہولڈرز کو قد عن ختم کیا جائے۔ کیونکہ مہمند میں صرف ایک لائسن ہے۔ ممبر قومی اسمبلی ساجد خان نے مائنز کاروباری طبقے کو یقین دلایا کہ وہ قومی اسمبلی فورم اور حکومتی حکام کے نوٹس میں یہ تمام مسائل لاؤنگا۔ انہوں نے کہا کہ مائنز کے کاروبار سے وابستہ افراد کو ساز گار ماحول مہیا کرنے کیلئے پوری کوشش کرونگا۔ کیونکہ ضلع مہمند میں واحد مائنز کے کاروبار سے ہزاروں لوگوں کا کاروبار وابستہ ہے۔ اور ہم چاہتے ہیں کہ یہ کاروبار کامیابی سے جاری ہو۔ جرگے کے آخر میں ایک چار رکنی کمیٹی بھی تشکیل دی گئی جو اس کاروبار میں حائل رکاؤٹوں کا جائزہ لے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر