نئے پاکستان کی تعمیر قرض کے پیسوں سے ممکن نہیں،حاجی حنیف طیب

نئے پاکستان کی تعمیر قرض کے پیسوں سے ممکن نہیں،حاجی حنیف طیب

کراچی (اسٹاف رپورٹر)نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ سابق وفاقی وزیرڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب ،میاں خالد حبیب ایڈووکیٹ،وسیم ممتازایڈووکیٹ،فداحسین ہاشمی ایڈووکیٹ،محمدحسین بابرایڈووکیٹ،ایوب بزدارایڈووکیٹ،فہیم ممتازایڈووکیٹ نے مشترکہ بیان میں کہاہے کہ نئے پاکستان کی تعمیر قرض کے پیسوں سے ممکن نہیں،پاکستان کی تعمیر اپنی مددآپ،سرمایہ کاری،تجارتی حجم بڑھانے،بدعنوانی کے خاتمے،لوٹ مارکاپیساواپس لانے کے ذریعے تو ہوسکتی ہے،لیکن آئی ایم ایف سے بھاری شرح سودپرقرضہ لے کر نہیں ہوسکتی،کیوں کہ سودپر قرض لے کر صرف سودی رقم اتنی ہوتی ہے کہ اس سے معیشت بیٹھ جاتی ہے جب کہ اصل رقوم اپنی جگہ برقراررہتی ہے۔رہنماؤں نے کہاکہ ہماری تقریباًماضی قریب کی تمام حکومتوں نے قرض پر قرض لے کر ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچادیاہے۔بظاہر تو موجودہ وزیراعظم عمران خان سے توقع تھی کہ وہ اپنے قوم سے کئے گئے وعدے کے مطابق آئی ایم ایف سے قرضہ نہیں لیں گے ،لیکن اَب وہ کڑی شرائط پر قرضہ لینے کے لئے آمادہ ہوچکے ہیں،جس کا بین ثبوت یہ ہیں کہ پاکستانی روپے کی قدرتشویش ناک حد کم ہوتی جارہی ہے۔

Back to Conversion Tool

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر