پی ٹی آئی کے زبانی جمع خرچ کے علاوہ کچھ نہیں ‘حاکم علی جسکانی

پی ٹی آئی کے زبانی جمع خرچ کے علاوہ کچھ نہیں ‘حاکم علی جسکانی

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار 243 حاکم علی جسکانی نے کہا کہ پی ٹی آئی کے ووٹر سپورٹر دو ماہ میں ہی حکومتی پالیسیوں اور اقدامات سے تنگ نظر آرہے ہیں اور مہنگائی کے بڑھتے ہوئے طوفان کے باعث اپنے آپ کو قصور وار ٹھہرا رہے ہیں کہ پی ٹی آئی کے پاس زبانی جمع خرچ کے علاوہ کچھ عملی اقدامات اور پلاننگ نہیں ہے۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز ہزارہ گوٹھ اورپہلوان گوٹھ میں جنرل ورکر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ ڈسٹرکٹ ایسٹ کے صدر اقبال ساند، عبدالحق بلوچ، ریاض بلوچ ودیگر بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ جہاں ایک طرف ملک میں مہنگائی اور بیروزگاری کا جن پہلے ہی بے قابو تھا اس پر سونے پہ سہاگہ پیٹرول، بجلی ، سی این جی کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ سے غریب آدمی کی زندگی اجیرن ہوچکی ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر اسی طرح پی ٹی آئی کی حکومت عام آدمی سے جینے کا حق چھینتی رہی تو ملک انارکی کا شکار ہوجائیگااور ہر شخص اپنا اور اپنے بچوں کا پیٹ بھرنے کیلئے منفی راستے اختیار کرنے پر مجبور ہوگا جس کی ذمہ دار صرف اور صرف پی ٹی آئی کی حکومت ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی نے اپنے سابقہ پانچ سالہ دور میں کے پی کا جو حال کیااس کے باوجود پورا ملک اس کے سپرد کرنا لمحہ فکریہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ تبدیلی کے دعوے داروں نے دو ماہ میں عوامی فلاحی کے کاموں سے جس طرح یوٹرن لیا اس سے ان کی نیتوں کا بہ خوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ عوامی ہمدردی ، انقلاب اور تبدیلی کا پرفریب نعرہ لگانے والے بے نقاب ہوگئے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر