میاں محمود الرشید کے بیٹے کو گرفتار کرنے والے تینوں پولیس اہلکار اس وقت کہاں ہیں ؟ خوفناک دعویٰ سامنے آ گیا

میاں محمود الرشید کے بیٹے کو گرفتار کرنے والے تینوں پولیس اہلکار اس وقت کہاں ...
میاں محمود الرشید کے بیٹے کو گرفتار کرنے والے تینوں پولیس اہلکار اس وقت کہاں ہیں ؟ خوفناک دعویٰ سامنے آ گیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما عظمیٰ بخاری نے انکشاف کیا ہے کہ جن پولیس اہلکاروں نے پی ٹی آئی کے رہنما اور صوبائی وزیر برائے ہاﺅسنگ محمود الرشید کے بیٹے کو گرفتار کیا وہ غائب ہیں اور ان کے ٹیلیفون بھی بند جا رہے ہیں ۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے عظمیٰ بخاری کا کہناتھا کہ محمود الرشید کا بیٹا پکڑا جاتاہے اور اس کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی موجود ہے اور جو تین اہلکار اس ے گرفتار کرتے ہیں وہ غائب ہیں ، ان کے نمبرز بند ہیں ۔ میں نے خود پتا کیاہے اور آپ بھی چیک کر سکتے ہیں ۔ عظمیٰ بخاری کا کہناتھا کہ میں چیلنج کر سکتی ہوں اس بات کو اور آپ چیک بھی کر لیں کہ محمود الرشید نے کہا تھا کہ ان کا بیٹا اور وہ تمام لڑکے تفتیش میں شامل ہوں گے لیکن ان میں سے کوئی بھی کسی تھانے میں جا کرشامل تفتیش نہیں ہواہے ۔

عظمیٰ بخاری کا کہناتھا کہ یہ لوگ بار بار کے پی کے کی بات کرتے ہیں اور جب ہم کہتے تھے کہ کے پی کے میں سب فراڈ ہے آپ نہیں مانتے تھے ، جس بچی کو ڈی آئی خان میں برہنہ کر کے گھمایا گیا آج اس کے وزیر فیڈرل منسٹر ہیں ۔

یاد رہے کہ لاہور کے علاقہ غالب مارکیٹ میں ایک نوجوان کو پولیس نے گاڑی کے اندر لڑکی کے ساتھ غیر اخلاقی حالت میں رنگے ہاتھوں پکڑا جس کے بعد اس نوجوان اپنے دوستوں کے ساتھ مل کر پولیس اہلکاروں پر تشدد کیا اور موقع سے فرار ہو گئے جس کے بعد بات میڈیا میں آئی اور معلوم ہوا کہ وہ مبینہ طور پر محمود الرشید کا بیٹا ہے ۔

مزید : قومی