نوجوان سکول ٹیچر کی شادی، لیکن دلہن کون تھی؟ سکول انتظامیہ کو پتہ لگا تو نوکری سے ہی نکال دیا کیونکہ۔۔۔

نوجوان سکول ٹیچر کی شادی، لیکن دلہن کون تھی؟ سکول انتظامیہ کو پتہ لگا تو ...
نوجوان سکول ٹیچر کی شادی، لیکن دلہن کون تھی؟ سکول انتظامیہ کو پتہ لگا تو نوکری سے ہی نکال دیا کیونکہ۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ کے ایک بنگلہ دیشی نژاد سکول ٹیچر نے اپنے آبائی ملک جا کر ایسی لڑکی سے شادی کر لی کہ جب سکول انتظامیہ کو پتا چلا تو نہ صرف اسے نوکری سے نکال دیا گیا بلکہ ہمیشہ کے لیے اس کے ٹیچر بننے پر ہی پابندی عائد کر دی گئی۔میل آن لائن کے مطابق 22سالہ جاسم نور نامی یہ ٹیچر لندن ناٹیکل سکول میں فزکس پڑھاتا تھا۔ وہ گرمیوں کی چھٹیوں میں اپنے آبائی ملک گیا جہاں ایک 13سالہ لڑکی سے شادی کر لی۔

رپورٹ کے مطابق جاسم نے لڑکی کو ایک ویڈیو کے ذریعے پسند کیا تھا، جو لڑکی کے باپ نے بنا کر اسے بھیجی تھی۔ یہ ایک ارینج میرج تھی۔ اس بابت سکول انتظامیہ کو علم ہونے پر جب اس سے پوچھ گچھ کی گئی تو اس نے بتایا کہ ”مجھے علم نہیں تھا کہ لڑکی کی عمر 13سال ہے۔ اس کے والدین نے ہمیں بتایا تھا کہ اس کی عمر 18سال ہے۔“ تاہم ٹیچنگ ریگولیشن اتھارٹی پینل کے سامنے لڑکی نے اس کے جھوٹ کا بھانڈہ پھوڑ دیا۔

لڑکی نے پینل کو بتایا کہ ”میں نے شادی سے تین دن پہلے جاسم کو بتادیا تھا کہ میری عمر 13سال ہے۔ اس کے باوجود اس نے میرے ساتھ شادی کر لی۔“ لڑکی نے بتایا کہ ”شادی کے بعد اس نے میرے ساتھ جنسی تعلق بھی استوار کیا۔“ ریگولیشن اتھارٹی نے جاسم کے ٹیچنگ کا شعبہ اختیار کرنے پر ہمیشہ کے لیے پابندی عائد کر دی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ