پشاور کے رہائشیوں کے رشتہ داروں کا پولیس کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

پشاور کے رہائشیوں کے رشتہ داروں کا پولیس کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  

پشاور (سٹی رپورٹر) پشاور اور مہمند کے رہائشیوں نے اپنے رشتہ داروں پر پولیس کی جانب سے مبینہ بے بنیاد مقدمات کے اندراج کیخلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین کی قیادت پشاور کے علاقہ متنی ادیزئی کے رہائشی شوکت خان ادیزئی کر رہے تھے جنہوں نے کہاکہ ان کے داماد شہباز خان سے پنچ کھٹہ چوک یکہ توت میں رہائش پذیر شیر زمین ولد اسلم بھتہ مانگ رہے ہیں جبکہ بھتہ نہ دینے پر بے بنیادمقدمات کا اندراج کر رہے ہیں، چند ماہ قبل ایک قتل کے الزام میں شہباز خان، دانیال محبوب اور تاویز خان پر مقدمہ درج کرلیاجبکہ مجھ اور شہباز خان پر دوسرے کیس میں 506 اور 324 کے تحت مقدمات درج کروائے جس میں ہم نے بی بی اے کرائی، لیکن قتل مقدمے میں دانیال محبوب اور تاویز خان تاحال سنٹرل جیل میں پڑے ہیں، انصاف کی فراہمی کیلئے پولیس حکام کو درخواستیں دی گئیں لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوئی جس پر وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا‘ آئی جی پولیس‘ سی سی پی پشاور اور دیگر پولیس حکام شفاف انکوائری کرے اور مذکورہ شخص کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ورنہ احتجاج میں شدت لاکر بچوں سمیت خودسوزی کرینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -