پاکستان بارکا فروغ نسیم کے لائسنس معطلی کا معاملہ انضباطی کمیٹی کو بھجوانے کا فیصلہ

پاکستان بارکا فروغ نسیم کے لائسنس معطلی کا معاملہ انضباطی کمیٹی کو بھجوانے ...

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان بار کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی نے وزیر قانون فروغ نسیم کو مس کنڈکٹ کا مرتکب قرار دیتے ہوئے وزیر قانون کی بطور رکن بار کونسل رکنیت منسوخ کرنے کے لیے معاملہ انضباطی کمیٹی کو بھجوانے کا فیصلہ کیا۔انضباطی کمیٹی کے چیئرمین جسٹس عمر عطا بندیال ہیں،قانون کے مطابق سپریم کورٹ یا ہائیکورٹ کا وکیل کسی سرکاری عہدے پر فائز ہونے کے بعد لائسنس معطل کروانے کا پابند ہوتا ہے،پاکستان بار کونسل نے وزیر قانون فروغ نسیم کی وکالت کا لائسنس معطل کیا تھا،وزیر قانون نے لائسنس معطلی کے فیصلے کو اٹارنی جنرل کے سامنے چیلنج کیا،اٹارنی جنرل نے پاکستان بار کونسل کے نوٹیفکیشن کو معطل کر دیا،اٹارنی جنرل کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر کر دی گئی،سپریم کورٹ نے فروغ نسیم کے لائسنس معطلی معاملے پر قرار دیا کہ بار کونسل معاملے کو خود دیکھے،پاکستان بار کونسل نے فروغ نسیم کو پانچ بار شوکاز نوٹس جاری کیا، پاکستان بار کونسل نے کہاکہ وزیر قانون نے آخری شوکاز نوٹس کے جواب میں کہا کونسل کا نوٹیفکیشن غیر قانونی ہے،پاکستان بار کونسل نے فروغ نسیم کے جواب کو غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے مس کنڈکٹ کا مرتکب قرار دے دیا،بار کونسل کمیٹی نے وزیر قانون فروغ نسیم کا لائسنس معطل کرنے کے لیے معاملہ انضباطی کمیٹی کو بھجوانے کا فیصلہ کرلیا۔

فروغ نسیم

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...