توہین عدالت کی مختلف درخواستوں کی سماعت

  توہین عدالت کی مختلف درخواستوں کی سماعت

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس نعیم انور پر مشتمل دو رکنی بینچ نے سرکاری افسروں کے خلاف دائرتوہین عدالت کی درخواستوں کی سماعت کے دوران ایڈوکیٹ جنرل آفس کے لاء افسروں کو پیروی سے روک دیااورموقف اختیار کیاہے کہ توہین عدالت کے مرتکب افسر اپنے خرچے پروکیل کریں گے تاکہ انہیں عدالتی احکامات کی عدم تعمیل کاپتہ چل سکے فاضل بینچ نے یہ ریمارکس گزشتہ روز توہین عدالت کی مختلف درخواستوں کی سماعت کے دوران دیئے درخواستوں کی سماعت کے دوران افسران پیش نہیں ہوئے جبکہ صوبائی حکومت کا ڈپٹی ایڈوکیٹ جنرل پیش ہوا جس پر چیف جسٹس نے انہیں ہدایت کی کہ وہ آئندہ توہین عدالت کے مرتکب افسران کی جانب سے پیش نہیں ہونگے بلکہ وہ زاتی خرچے پر وکیل کریں گے تاکہ اسے عدالتی احکامات کی نظر اندازی کا پتہ چل سکے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...