فیصلے سے قبل گرفتار کرنے پر ملزم اور پولیس اہلکار میں ہاتھا پائی

  فیصلے سے قبل گرفتار کرنے پر ملزم اور پولیس اہلکار میں ہاتھا پائی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ میں چوری کے مقدمہ میں ضمانت کے لئے آنے والے شہری کوعدالتی فیصلے سے قبل گرفتارکرنے کی کوشش پر ملزم نے پولیس اہلکار کا گریبان پکڑ لیا، دونوں میں کافی دیر تک ہاتھا پائی ہوتی رہی،جس کے بعد عدالت عالیہ کے سیکیورٹی اہلکاروں نے معاملہ رفع دفع کروادیا۔جسٹس سیدشہبازعلی رضوی نے ملزم ہارون الرشیدکی درخواست ضمانت پر سماعت کی۔ملزم کے وکیل نے موقف اختیارکیاکہ گجرات پولیس نے بے بنیادچوری کا مقدمہ کیا،ٹھوس شواہد نہ ہونے کے باوجودٹرائل کورٹ نے ضمانت خارج کردی، وہ بے قصورہے،وکیل نے دلائل دیتے ہوئے استدعاکی کہ درخواست ضمانت منظور کی جائے۔ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل پنجاب نے درخواست ضمانت کی مخالفت کرتے ہوئے کہاکہ ملزم پولیس تفتیش میں قصور وار ہے۔ عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعددرخواست ضمانت پرفیصلہ محفوظ کر لیا،فیصلہ سنانے سے پہلے پولیس ملازم کی جانب سے ملزم کی گرفتاری کے معاملے پردونوں میں ہاتھا پائی شروع ہوگی اورملزم نے پولیس اہلکار کو گریبان سے پکڑ لیاتاہم وہاں موجودسیکیورٹی اہلکاروں کی مداخلت سے معاملہ رفع دفع ہوگیا۔

مزید :

علاقائی -