دنیا کی کوئی طاقت ہمیں آزادی مارچ سے نہیں روک سکتی، عبد الغفور حیدری، حافظ حسین

  دنیا کی کوئی طاقت ہمیں آزادی مارچ سے نہیں روک سکتی، عبد الغفور حیدری، حافظ ...

  

اسلام آباد (این این آئی) جمعیت علمائے اسلام آباد (ف) کمے سیکرٹری جنرل مولانا عبد الغفور حیدری نے کہاہے کہ 27 اکتوبر کا انتخاب اسلئے کیا گیا اس دن بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر میں داخل ہوئیں،مظلوم کشمیریوں سے یکجہتی کا اظہار کریں گے، ہمارے حکمرانوں نے کشمیر بیچ دیا اب مگر مچھ کے آنسو بہا رہے ہیں،قوم کشمیر کے سودے پر وزیراعظم سے جواب طلب کرے، کارکنان 27اکتوبر کو گھروں سے نکلیں اور اسلام آباد کی طرف قدم بڑھائیں،ڈی چوک میں اسپیکر، سٹیج، باتھ رومز اور بجلی کا بندوبست کررہے ہیں،مولانافضل الرحمن کسی دباؤ کو قبول نہیں کریں گے،ہماری جنگ اداروں کے ساتھ نہیں،سلیکٹڈ حکومت کے ساتھ ہے جو ہم جیتیں گے،ہمارے قافلوں کو جہاں روکا گیا  وہیں دھرنا دے دیا جائے گا۔ بدھ کو مولانا عبدالغفور حیدری سیکرٹری جنرل جے یو آئی (ف) نے دیگر رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ آزادی مارچ کوریج پر میڈیا کے شکرگزار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ 27 اکتوبر کا انتخاب اسلئے کیا گیا اس دن بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر میں داخل ہوئیں،27 اکتوبر کو کشمیری یوم سیاہ مناتے ہیں انہوں نے کہاکہ ہم نے آزادی مارچ کے لیے تمام انتظامات مکمل کرلیے۔ انہوں نے کہاکہ 27 اکتوبر کو کارکنان گھروں سے باہر نکلیں اور اسلام آباد کی طرف قدم بڑھائیں،ملک بھر سے اسلام آباد کے لیے روانہ ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ تمام کارکنان ہمارے ساتھ رابطے میں رہیں۔مولانا عبدالغفور حیدری  نے کہاکہ ڈی چوک میں اسپیکر، سٹیج، باتھ رومز اور بجلی کا بندوبست کررہے ہیں،ہمارے کارکنان کو تنگ کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ مرکز کا فیصلہ ہے،کارکنان مارچ کو کامیاب بنائیں۔ انہوں نے کہاکہ مولانافضل الرحمن کسی دباؤ کو قبول نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ ہماری جنگ اداروں کے ساتھ نہیں بلکہ سلیکٹڈ حکومت کے ساتھ ہے جو ہم جیتیں گے۔ انہوں نے کہاکہ اگر کسی ادارے نے کسی کو سپورٹ کیا تو اپنی ساکھ کا نقصان کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ لمحہ بہ لمحہ حالات دیکھ کر آزادی مارچ کا فیصلہ کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں انتظامیہ کی جانب سے این او سی کی ضرورت نہیں، صرف اطلاع دیتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اپنے آئینی حق کے لیے اجازت نہیں بلکہ اطلاع کی ضرورت ہوتی ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیاکہ سکیورٹی اداروں کے اہلکار مدارس میں جارہے اور روک رہے ہیں لیکن مدارس کے لوگ کسی دباؤ میں نہیں آئیں گے۔ ایک سوال پر مولانا عبد الغفور حیدری نے کہاکہ وزیراعلی کے پی کے چھوٹا آدمی ہے،وہ حادثاتی طور پر وزیراعلی بنے ہیں،کے پی کے کے وزیراعلی اپنی خیرمنائیں اور ستائیس اکتوبر کو گھر سے باہر نہ نکلیں۔انہوں نے کہاکہ عمران خانے اپنے دھرنے کے دوران بجلی کے بلوں کو آگ لگائی،سول نافرمانی کی پھر بھی گرفتار نہیں ہوئے۔عبدالغفور حیدری 

عبدالحکیم (این این آئی) جمعیت علمائے اسلام پاکستان (ف) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات بزرگ سیاستدان سابق سینیٹر حافظ حسین احمد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے آزادی مارچ کے اثرات ابھی سے نظر آنا شروع ہوگئے ہیں اور ہم بازی جیت چکے ہیں مارچ کے شرکاء  دو ہفتے قبل ہی فعال ہو کر منزل کی جانب گامزن ہیں عمران خان نے اپوزیشن جماعتوں کو خود دھرنے کی دعوت دی تھی عمران خان نے تو ہمیں خود کہا تھا کہ مولانا دھرنا دے ہم انکو کنٹینر کھانا ودیگر سہولیات فراہم کریں گے عمران خان ہمیں کھانا اور کنٹینر نہ دیں صرف راستہ دے دیں یہی ہمارے لیے کافی ہوگا حکومت نے خود کہا تھا کہ پی ٹی آئی نے 126 دن دھرنا دیا فضل الرحمن ہمیں صرف ایک ماہ اسلام آباد میں ٹھہراو کرکے دکھائیں حافظ حسین احمد نے کہا کہ اب ہم نے احتجاج کی کال دی تو حکومتی وزراء نے دھمکیاں اور قیادت کو ہراساں کرنا شروع کر دیا ہے کیا اس بات پر بھی نیازی اینڈ سنز نے یوٹرن لے لیا ہے ابھی ہم نے حکومت کے خلاف احتجاج شروع نہیں کیا ابھی سے حکومت نے عوام کو بیوقوف بنانے کیلئے لنگر کھانوں کا اہتمام شروع کر دیا ہے۔   

 حافظ حسین

مزید :

صفحہ آخر -