پی پی دھرناکی بجائے جلسہ کیلئے جے یوآئی(ف) کو منانے کیلئے کوشاں 

پی پی دھرناکی بجائے جلسہ کیلئے جے یوآئی(ف) کو منانے کیلئے کوشاں 

  

لاہور(شہزاد ملک) پاکستان پیپلز پارٹی نے جے یو آئی پر واضح کردیا ہے کہ پیپلز پارٹی دھرنوں کی سیاست پر یقین نہیں رکھتی اس لئے پیپلز پارٹی کسی بھی جماعت کی طرف سے دئیے جانے والے دھرنوں میں شرکت نہیں کرے گی اور نہ ہی پیپلز پارٹی کسی مذہبی ایشو کی بنیاد پر دئیے جانے والے دھرنے یااحتجاجی تحریک کا حصہ بنے گی البتہ پیپلز پارٹی جے یو آئی کے مارچ کی اخلاقی حمایت جاری رکھے گی اور جے یو آئی کے سیاسی مطالبات کی حمایت میں مشروط طور پر ایک خیر سگالی وفد کی شکل میں شرکت کر سکتی ہے۔پیپلز پارٹی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کو پارٹی کی اعلی قیادت نے بتایا ہے کہ پیپلز پارٹی کی تاریخ ہے کہ وہ مذہبی ایشوز کی بنیاد پر سیاست کرنے پر یقین نہیں رکھتی ہے اور نہ ہی پیپلز پارٹی دھرنوں کی سیاست پر یقین رکھتی ہے سیاسی ایشوز کو سیاسی انداز میں ہی حل کرنے کی تحریک چلانی چاہئے اور کوئی بھی ایسا کام نہیں کرنا چاہئے کہ جس سے جمہوریت کو نقصان پہنچنے کااندیشہ ہو۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کی کوشش ہے کہ دھرنے کی بجائے جلسے جلوس اور عوامی رابطہ مہم کی تحریک شروع کی جائے اور اس مقصد کیلئے پیپلز پارٹی کی اے پی سی میں تشکیل پانے والی رہبر کمیٹی کے ارکان جے یو آئی کو بھی منانے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں لیکن جے یو آئی بضد ہے کہ اس نے اپنے اعلان کے مطابق 27اکتوبر کو ہر قیمت پر آزادی مارچ شروع کرنا ہے اور اسلام آباد کے ڈی چوک پر دھرنا بھی دینا ہے۔ 

 پیپلز پارٹی/ کوشاں 

مزید :

صفحہ اول -