پنجاب کے مختلف اضلاع میں 71 آئی بی اوز کا انعقاد

  پنجاب کے مختلف اضلاع میں 71 آئی بی اوز کا انعقاد

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)سی ٹی ڈی پنجاب نے کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کے لیے پنجاب کے مختلف اضلاع میں 71 آئی بی اوز کا انعقاد کیا ہے۔جس میں 73 مشتبہ افراد سے پوچھ گچھ کی گئی   ان آئی بی اوز کے دوران 7 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔  گرفتار شدہ تفصیلات درج ذیل ہیں محمد مشتاق ولد عبدالمجید کو آر وائی خان سے گرفتار کیا گیا۔  اس کا تعلق کالعدم تنظیم LeJ سے ہے۔  وہ اہل تشی فرقے کے خلاف نفرت انگیز پمفلٹ اور کالعدم تنظیم ایل جے کے اسٹیکرز تقسیم کر رہا تھا اور لوگوں میں فرقہ واریت پھیلا رہا تھا   با ظفر محمود خان ولد محمد عالم خان جھنگ سے گرفتار  اس کا تعلق کالعدم تنظیم TJP سے ہے وہ سوشل میڈیا کے ذریعے اپنی ناکارہ تنظیم کی تشہیر کر رہا تھا اور فیس بک پر "صحابہ اکرام" کے خلاف نفرت انگیز پوسٹ شیئر کر رہا تھا شخص عاصم رضا ولد محمد علی گوجرانوالہ سے گرفتار  اس کا تعلق کالعدم تنظیم TNFJ سے ہے وہ اسٹیکرز کے ذریعے اپنی ناکارہ تنظیم کی تشہیر کر رہا تھا اور لوگوں میں فرقہ واریت پیدا کرنے کے لیے ممنوعہ کتابیں تقسیم کر رہا تھا آصف علی ولد محمد اسلم نعمان اعجاز ولد محمد اسلم، مظہر عباس ولد خوشی محمد حافظ آباد سے گرفتار ان کا تعلق کالعدم تنظیم ایس ایس پی سے ہے۔  وہ اپنی ناکارہ تنظیم ایس ایس پی کے اشتہار کے لیے جھنڈے اور اسٹیکرز چھاپ رہے تھے۔  سید تنزیل الرحمن ولد سید اعجاز حسین شاہ کو لاہور سے گرفتار کیا گیا۔  اس کا تعلق کالعدم تنظیم ایچ یو ٹی سے ہے۔  وہ اپنی ناکارہ تنظیم کی مالی مدد کے لیے فنڈ اکٹھا کر رہا تھا جس کی وجہ سے اس کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ 

سی ٹی ڈی پنجاب محفوظ اور محفوظ پنجاب کے اپنے ہدف پر عمل پیرا ہے اور دہشت گردوں اور ریاست مخالف عناصر کو سلاخوں کے پیچھے لانے کی کوششوں میں کوئی کسر نہیں چھوڑے گا۔ 

مزید :

علاقائی -