پتو کی میں کمسن گھریلو ملازمہ تشدد سے جاں بحق، وزیر اعلیٰ کا نوٹس،رپورٹ طلب

  پتو کی میں کمسن گھریلو ملازمہ تشدد سے جاں بحق، وزیر اعلیٰ کا نوٹس،رپورٹ طلب

  

    پتوکی، لاہور(نامہ نگار، کرائم رپورٹر)پتوکی میں کمسن گھریلو ملازمہ مالکان کے تشدد سے قتل،وزیراعلیٰ پنجاب کا نوٹس، آئی جی سے رپورٹ طلب کرلی،نواحی گاؤں ڈھولن چک نمبر 7 کی رہائشی 13 سالہ یتیم کرن شہزادی لاہور میں گھریلو ملازمہ کے طور پر کام کرتی تھی، لواحقین نے الزام عائد کیا کہ ہماری بچی کو شدید تشدد کا نشانہ بنا کر قتل کیا گیا،  بچی کے جسم پر تشدد کے واضح نشان ہیں، مالکان نے ہمیں اطلاع دی کہ آپکی بچی نے گھر کی چھت سے کود کر خودکشی کرلی اور نعش کو خاموشی سے گھر بھیج دیا۔ مالکان نے یتیم بچی کی والدہ کو ایک لاکھ روپے دے کر خاموشی سے تدفین کرنے کا بھی کہا۔ اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے لاش کا پوسٹمارٹم کیا جائے گا اور رپورٹ آنے کے بعد مزید کارروائی کی جائے گی۔

گھریلو ملازمہ قتل

مزید :

علاقائی -