بریسٹ کینسر: مزار ِ قائد کو گلابی روشنیوں سے سجا دیا گیا

بریسٹ کینسر: مزار ِ قائد کو گلابی روشنیوں سے سجا دیا گیا

  

کراچی (پ ر)شوکت خانم ہسپتال کی جانب سے ملک بھر میں جاری بریسٹ کینسر سے آگاہی مہم کے تحت مزارِ قائد کی عمارت کو گلابی روشنیوں سے سجا دیا گیا۔ جمعہ کی شب شوکت خانم ہسپتال کے سی ای او ڈاکٹر محمد عاصم یوسف نے بٹن دباکر روشنیاں جلائیں۔ اس موقع پر انہوں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہر سال شوکت خانم میموریل ٹرسٹ کی جانب سے اکتوبر کے مہینے میں لوگوں کے بریسٹ کینسر کی بر وقت تشخیص کے بارے میں آگاہی کے لیے ایک بھر پور مہم چلائی جاتی ہے۔ گزشتہ چند سالوں میں ٹرسٹ کی جانب سے اس مہم کے دائرہ کار کو مزید بڑھا تے ہوئے اہم قومی عمارات کو گلابی روشنیوں سے مزین کرنے کا سلسہ شروع کیا گیا ہے۔مزار ِ قائد کی یہ اہم عمارت تین دن تک گلابی روشنیوں سے سجی رہے گی۔اس بیماری کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بریسٹ کینسر دنیا بھر کی خواتین میں پایا جانے والا سب سے عام کینسر ہے اورپاکستان ان ایشیائی ممالک میں شامل ہے جہاں بریسٹ کینسر کی شرح بہت زیادہ ہے۔ گزشتہ کئی برسوں سے بریسٹ کینسر، شوکت خانم ہسپتال لاہور اور پشاور میں دیکھا جانے والا سب زیادہ مرض ہے۔شوکت خانم ہسپتال کی جانب سے گزشتہ 25سالوں سے چھاتی کے سرطان کے حوالے سے نہ صرف آگہی کی مہم چلائی جا رہی ہے بلکہ اب تک یہاں اس مرض کا شکار ہزاروں خواتین کا کامیاب علاج بھی کیا جا چکا ہے۔

 ایک اندازے کے مطابق آگاہی کے اقدامات کی وجہ سے اس مرض کی شکار خواتین میں جان بچنے کی شرح پچیس سے تیس فیصد تک بڑھ گئی ہے ۔نہوں نے مزید کہا کہ بیس سے چالیس سال کی عمر کی خواتین کو باقاعدگی سے اپنا معائینہ کروانا چاہیے جبکہ چالیس سال سے زائد عمر کی خواتین کو میمو گرافی کروانی چاہیے۔ اگر کسی عورت کو اپنے جسم میں کوئی تبدیلی محسوس ہو تو اسے فوراً کسی اچھے معالج سے مشورہ کرنا چاہیے۔ اس آگاہی مہم کے تحت شوکت خانم میموریل ٹرسٹ کی جانب سے آگاہی واک، پولو میچ جیسی تقریبات کے ساتھ ملک بھر میں آن لائن سیشن کا انعقاد کیا جاتا ہے تا کہ زیادہ سے زیادہ خواتین اس بارے میں جان سکیں۔ ڈاکٹر عاصم کا کہنا تھا کہ بریسٹ کینسرکے اس حساس موضوع پر آگاہی پھیلانے میں میڈیا نے انتہائی اہم کردار ادا کیا ہے لیکن ابھی اس حوالے سے مزید کام کی ضرورت ہے  تا کہ جان بچانے کا یہ اہم پیغام پاکستان کے ہر شہر اور ہر گاؤں تک پہنچ جائے۔  

مزید :

کامرس -