چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع کیلئے غیرآئینی طریقہ اپنا یا گیا: پیپلز پارٹی پنجاب 

چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع کیلئے غیرآئینی طریقہ اپنا یا گیا: پیپلز ...

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر راجہ پرویز اشرف،جنرل سیکرٹری پنجاب سید حسن مرتضیٰ،سیکرٹری اطلاعات پنجاب شہزاد حسین چیمہ،سابق صوبائی وزیر نیلم جبار،سابقہ ایم پی اے نور النساء ملک نے کہا ہے کہ نیب کو سیاسی مقاصد کے لیے پہلے بھی استعمال کیا جاتا رہا اب بھی یہی روش جاری ہے نیب چیئرمین کی مدت ملازمت میں توسیع کے لیے غیر آئینی اور غیر جمہوری راستہ اپنایا گیا نیب ترمیمی آرڈیننس کو پیپلز پارٹی سمیت پوری قوم نے مسترد کر دیا۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ان کا کہنا تھا کہ پنڈورا پیپرز میں اپنوں کا نام آنے کے بعد راتوں رات آرڈیننس کا اجراء کیا گیا نیب آرڈیننس کو فرد واحد اور مخصوص جماعت کو بچانے کی ایک کوشش  ہے۔انہوں نے کہا کہ آخر سونامی سرکار کب تک ملک کو آرڈیننسوں پر چلائے گی پیپلز پارٹی اس آرڈیننس پر مشترکہ حکمت عملی اپنائے گی ا ٓرڈیننس پر پارلیمنٹ میں کھلی بحث ہونی چاہیے صرف آئین و قانون کے مطابق شقیں تسلیم کرینگے فرد واحد کو بچانے والی شقوں کی اسمبلی کے اندر اور باہر ڈٹ کر مخالفت کرینگے پیپلز پارٹی آئین، جمہوریت اور پارلیمنٹ کی بالا دستی پر یقین رکھتی ہے اور کسی کو بھی پارلیمنٹ سے بالا قانون سازی کی اجازت نہیں دی جا سکتی قانو ن سازی کرنا صرف اور صرف اسمبلی کا کام ہے اس پر ہم کوئی بھی  سمجھوتہ نہیں کرینگے اور نہ ہی حکومت کو اسمبلی کو بلڈوز کرکے آرڈیننس لانے کی اجازت دیں گے یہ حکومت نے وطیرہ ہی بنا لیا ہے کہ ہر کام پر وہ اپنی مرضی کا آرڈیننس لے آتی ہے حکومت اسمبلی سے راہ فرار اختیار کرنے کے ہر وقت مواقع تلاش کرتی رہتی ہے پیپلز پارتی جلد ہی اس اہم پوائنٹ پر دیگر اپوزیشن جماعتوں سے بھی مشاورت کرکے ایک متفقہ حکمت عملی کے ساتھ آگے بڑھے گی۔

پیپلز پارٹی پنجاب 

مزید :

صفحہ آخر -