مردان،نجی ہسپتال میں مریض کی ہلاکت،ڈاکٹر اور سیکورٹی گارڈ گرفتار،سنٹر سیل

مردان،نجی ہسپتال میں مریض کی ہلاکت،ڈاکٹر اور سیکورٹی گارڈ گرفتار،سنٹر سیل

  

    مردان(بیورورپورٹ) مردان کے نجی بحالی سنٹر میں مریض کو مبینہ طورپرتشددسے ہلاک کرنے والے ڈاکٹر اور سیکورٹی گارڈ کوگرفتارکرکرکے سنٹر کو سیل کردیاگیاتفصیلات کے مطابق گذشتہ روز مقامی نوجوان تاجر 34سالہ یاسر خان نشے سے چھٹکار اپانے کے لئے بغدادہ میں قائم ڈرگ ایڈیکٹڈ ٹریٹمنٹ سنٹر میں زیر علاج تھا جسے مبینہ طورپر ہسپتال کے ڈاکٹر اور سیکورٹی گارڈ نے شدید جسمانی تشدد کرکے ہلاک کیاتھا مقدمے کے اندراج کے بعد سٹی پولیس کے ایس ایچ او انسپکٹر عاشق حسین کی قیادت میں چھاپہ مارٹیم ڈاکٹر شیرازخان اور سیکورٹی گارڈ ضیاء الرحمان کو گرفتارکرلیا بحالی سنٹر انتظامیہ نے نوجوان کی ہلاکت کے بعد ورثاء کو مریض کی خودکشی کی اطلاع کردی جس پر ورثاء پہنچے تو نوجوان کے جسم پرشدید تشدد کے نشانات دیکھ کر پولیس کو اطلا ع کردی پولیس اور انتظامیہ کے آفیسراان موقع پر پہنچ گئے اور ہسپتال کو سیل کرکے ڈاکٹر اور سیکورٹی گارڈ کے خلاف مقدمہ درج کرلیاتھا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -