اسلام آباد ہائیکورٹ، کلبھوشن کو وکیل فراہمی کی درخواست 9دسمبر کو دوبارہ سماعت کیلئے مقرر 

اسلام آباد ہائیکورٹ، کلبھوشن کو وکیل فراہمی کی درخواست 9دسمبر کو دوبارہ ...

  

  اسلام آباد(آئی این پی، این این آئی)اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو وکیل کی فراہمی کی درخواست 9دسمبر کو دوبارہ سماعت کے لیے مقرر کر دی، نجی ٹی وی کے مطابق عدالت نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو سے متعلق عالمی عدالت  انصاف کے فیصلے پر عمل درآمد کے معاملے پر سماعت کے دوران گزشتہ سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے 3صفحات پر مشتمل حکم نامہ تحریر کیا،اسلام آباد ہائی کورٹ نے اپنے حکم نامے میں کہا کہ عالمی عدالت کے فیصلے پر موثر عمل درآمد بھارتی معاونت سے ہی ممکن ہے، کیس میں معاونت سے بھارت کی خود مختاری متاثر نہیں ہو گی،حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ بھارتی قیدی جسپال کے کیس میں بھارت اسی عدالت میں پیروی کر چکا ، جسپال کے کیس میں اسی عدالت نے بھارتی سفارت خانے کو ریلیف دیا  حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ جسپال کیس میں بھی بھارت کی خود مختاری کا مکمل خیال رکھا گیا تھا، بھارت کو کوئی خدشات ہیں تو  عدالت کو آگاہ کر سکتا ہے،حکم نامے کے مطابق عالمی عدالت کے فیصلے پر عمل اور فیئر ٹرائل یقینی بنانا حکومت  پاکستان کا فرض ہے، مناسب ہو گا کہ کلبھوشن کے لیے وکیل کی فراہمی کا بھارت کو ایک اور موقع دیا جائے،اسلام آباد ہائی کورٹ نے حکم نامے میں ہدایت کی ہے کہ رجسٹرار آفس 9دسمبر کو دوبارہ یہ کیس سماعت کے لیے مقرر کرے۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے کہا ہے کہ کلبھوشن یادیو کے لیے فئیر ٹرائل یقینی بنانا بھی اہم مرحلہ ہے، مناسب ہے بھارت کو ایک اور موقع دیا جائے اگر پروسیڈنگ سے متعلق کوئی اعتراض ہو تو بھارت عدالت کے سامنے رکھے عدالت نے کہاکہ مناسب ہے بھارت کو ایک اور موقع دیا جائے اگر پروسیڈنگ سے متعلق کوئی اعتراض ہو تو بھارت عدالت کے سامنے رکھے،رجسٹرار ہائی کورٹ کیس کو آئندہ کے لیے نو دسمبر کو سماعت کے لیے مقرر کریں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ

مزید :

صفحہ اول -