اسلام آباد ہائیکورٹ ، پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ تحقیقات کیخلاف درخواست ممنوعہ فنڈنگ کیسز کیساتھ منسلک کرنے کا حکم

اسلام آباد ہائیکورٹ ، پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ تحقیقات کیخلاف درخواست ممنوعہ ...
اسلام آباد ہائیکورٹ ، پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ تحقیقات کیخلاف درخواست ممنوعہ فنڈنگ کیسز کیساتھ منسلک کرنے کا حکم

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) اسلام آباد ہائیکورٹ میں پاکستان تحریک انصاف کے خلاف ممنوعہ فنڈنگ تحقیقات کیخلاف درخواست  کی سماعت ہوئی ، عدالت نے درخواست کو ممنوعہ فنڈنگ  کیسز کے ساتھ منسلک کرنے  کا حکم دیدیا۔

نجی ٹی وی " ہم نیوز" کے مطابق  اسلام آباد ہائیکورٹ میں پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس کیخلاف درخواست کی سماعت ہوئی ،  دوران سماعت عدالت نے پاکستان تحریک انصاف کی درخواست پر ایف آئی اے کو نوٹس جاری کر دیا ،  عدالت نے ریمارکس دیے کہ ایف آئی اے قانون کے مطابق کارروائی کرے ، کیسز 19 اکتوبر کو سماعت کے لیے مقرر ہیں کیا یہ اسی طرح کا ہے؟ ، جس پر وکیل نے عدالت کو بتایا جی کہ یہ اسی نوعیت کا کیس ہے ، پہلے بینکنگ سرکل انکوائری کررہا تھا اب سائبر کرائم کر رہا ہے ۔

وکیل کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ نامنظور ڈاٹ کام سے فنڈنگ  سے متعلق سائبر کرائم نے نئی انکوائری شروع کی ہے ۔

دوران چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ ریلی نکالنے کا ایک طریقہ ہے ، اجازت لینا ہوتی ہے ، دھرنا  کیس میں ایک فیصلہ موجود بھی ہے ، کیا آپ نے وہ پڑھا۔ وکیل نے عدالت میں کہا کہ یہ ایک سیاسی جماعت کی نہیں بلکہ ایک سابق ایم این اے کی درخواست ہے جس پر چیف جسٹس اطہر من اللہ  نے ریمارکس دیے کہ یہ سابق نہیں بلکہ اب بھی ممبر قومی اسمبلی ہیں ، استعفیٰ منظور ہونے تک یہ ممبر قومی اسمبلی ہی ہیں ۔

عدالت نے شہر میں دفعہ  144 کے قانون کیخلاف درخواست قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -