وزیر اعظم نے تھرکول بلاک ٹو سندھ اینگروکول مائن کمپنی کے توسیع منصوبے کا افتتاح کر دیا

وزیر اعظم نے تھرکول بلاک ٹو سندھ اینگروکول مائن کمپنی کے توسیع منصوبے کا ...
وزیر اعظم نے تھرکول بلاک ٹو سندھ اینگروکول مائن کمپنی کے توسیع منصوبے کا افتتاح کر دیا

  

تھرپارکر( ڈیلی پاکستان آن لائن ) وزیراعظم شہباز شریف نے تھر کول بلاک2سندھ اینگرو کول مائنز کمپنی کے توسیع منصوبے کا افتتاح کر دیا،  وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی جانب سے وزیراعظم شہباز شریف کو تھر کول منصوبے پر بریفنگ دی گئی۔

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ تھر میں 175 ملین ٹن کوئلے کے ذخائر موجود ہیں جس سے گیس بناسکتے ہیں،تھر کے کوئلے سے  آئندہ سال تک ملکی معیشت میں غیر معمولی اضافہ ہوگا   تھر کے کوئلے سے 10 روپے فی یونٹ بجلی پیدا ہوگی، یہ جدید ٹیکنالوجی سے مکمل ہونے والا منصوبہ ہے جس سے ماحولیاتی آلودگی پیدا نہیں ہوگی، یہ ایک  خوشحالی اور ترقی کا منصوبہ ہے، ایک وقت تھا جب یہاں  زندگی کے آثار نہیں تھے اور آج یہاں سے بجلی کی پیداوار  ہوتی ہے ۔

وزیر اعظم نے کہا کہ تھر میں بہترین معیار کے پلانٹ اور بوائلر ہیں، اس منصوبے سے پاکستان کی معیشت کو فائدہ پہنچے گا، منصوبے سے ہمارے زرمبادلہ کی خطیر رقم بچ جائے گی، اگر 100 فیصد تھرکول سپلائی کیا جائے تو اربوں ڈالرز بچے گے ۔تھر میں کوئلے کا بڑا ذخیرہ ہے جسے تیل اور ڈیزل میں تبدیل کرنے سے متعلق آئندہ ہفتے اسلام آباد میں اجلاس بلاؤں گا۔ گیس ہماری استطاعت سے باہر ہے، ابھی تک اس کا انتظام نہیں ہوسکا۔

 اس موقع پر  وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ نے  وزیراعظم کو تھر کول منصوبے پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ  تھر کے کوئلے سے صنعتی پہیے کو توانائی بخشنے کی بنیاد بینظیر بھٹو نے ڈالی ، تھر کے کوئلے سے بجلی کی پیداوار کے لیے وسیع تر روڈ نیٹ ورک ، برجز اور ایئرپورٹ کی ضرورت تھی،حکومت سندھ نے محنت کے بعد 750 ملین ڈالرز خرچ کرکے تھر کا انفرااسٹرکچر تعمیر کیا، حکومت سندھ اور اینگرو نے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت 2009 میں بلاک ٹو سے کوئلہ نکالا،سندھ اینگرو کول پراجیکٹ میں سندھ حکومت کے 55 اور45 فیصد شیئر زاینگرو کے ہیں۔

وزیر اعلیٰ سید مراد علی شاہ نے وزیر اعظم شہباز شریف سے کہا کہ  کوئلہ سے 660 میگا واٹ پاور پلانٹ پر کام شروع کیا گیا،  روا ں سال کے آخر تک پاور پراجیکٹ میں بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت بڑھ کر2640 میگا واٹ ہوجائے گی، سال 2030 تک تھر کے کوئلے سے ملکی معیشت میں غیر معمولی اضافہ ہوگا،دسمبر تک تھر کول بلا ک ون سے 1320 میگا واٹ بجلی پیدا ہوگی، 1.2بلین ڈالر کا زرِ مبادلہ محفوظ ہوگا ۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ  درآمدی کوئلے پر چلنے والے بجلی کے کارخانے جب تھر کوئلے سے چلیں گے تو 1.5 بلین ڈالر کا زرمبادلہ محفوظ ہوگا،سیمنٹ کے کارخانے جب تھر کے کوئلے سے چلیں گے تو ملک کا 2 بلین ڈالر زرمبادلہ محفوظ رہے گا 

اس موقع پر وزیر اعظم شہباز شریف نے   تھر میں ڈمپر اورٹرک چلانے والی خواتین ڈرائیوروں سے ملاقات بھی کی ۔ وزیراعظم شہباز شریف اوروزیراعلیٰ سندھ نے  تھر کی خواتین کی محنت، لگن اور جذبے کی تعریف کی ۔

مزید :

اہم خبریں -بزنس -