اداکارہ و سیاستدان سونالی پھوگاٹ کی موت کے کیس میں نیا موڑ آگیا

اداکارہ و سیاستدان سونالی پھوگاٹ کی موت کے کیس میں نیا موڑ آگیا
اداکارہ و سیاستدان سونالی پھوگاٹ کی موت کے کیس میں نیا موڑ آگیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی ریاست ہریانہ سے تعلق رکھنے والے اداکارہ، ٹک ٹاکر اور بھارتیہ جنتا پارٹی سے وابستہ سیاستدان سونالی پھوگاٹ کی موت کے کیس میں ایک نیا موڑ آ گیا۔ زی نیوز کے مطابق سونالی پھوگاٹ کے بہنوئی امن پونیا نے کہا ہے کہ سونالی کی فیملی کونامعلوم لوگوں کی طرف سے دو خط موصول ہو چکے ہیں اور ان خطوط پر کو بھی تحقیقات میں شامل کیا جانا چاہیے کیونکہ ان میں سونالی کے متعلق اہم معلومات دی گئی ہیں۔

امن پونیا نے بتایا کہ ایک خط ایک ماہ قبل اور دوسرا چند دن پہلے ملا ہے۔ پہلے خط میں بتایا گیا ہے کہ سونالی پھوگاٹ کو قتل کیا گیا ہے اور ان کے قتل کی ڈیل 10کروڑ روپے میں ہوئی تھی۔ دوسرے خط میں کچھ سیاستدانوں کے نام بتائے گئے ہیں، جن کا اس واردات سے تعلق ہو سکتا ہے۔امن پونیا نے کہا کہ ”سونالی کی بہن روکیش اب آدم پور سے الیکشن لڑے گی اور ہمارا عام آدمی پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ ہم بھارتیہ جنتا پارٹی سے وابستہ ہیں اورلوگوں سے بات کرکے اس حوالے سے کوئی فیصلہ کریں گے۔“

واضح رہے کہ سونالی پھوگاٹ اگست میں بھارت کے ساحلی شہر گووا میں فیملی کے ہمراہ چھٹیاں منا رہی تھی جہاں ہوٹل کے کمرے سے اس کی لاش برآمد ہوئی۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ سونالی کے جسم پر گہرے زخموں کے نشانات تھے۔ پہلے کہا گیا کہ سونالی کو ہارٹ اٹیک ہوا ہے تاہم بعد دو روز بعد سونالی کے بھائی نے الزام عائد کیا کہ ان کی بہن کے ساتھ ہوٹل میں جنسی زیادتی کی گئی اور بعد میں زہر دے کر قتل کیا گیا۔ بھائی کے اس الزام کے بعد سونالی کی مشتبہ کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

مزید :

تفریح -