بھارتی کیلے کی قیمتیں

بھارتی کیلے کی قیمتیں
بھارتی کیلے کی قیمتیں

  

یہ بات ہم بڑی اچھی طرح جانتے ہیں کہ پاکستان میں کیلے کی پیداوار پچھلے کئی سال سے متاثر چلی آ رہی ہے۔ ہمارے خوراک اور زراعت کے ماہرین نے اس کی پیداواری صلاحیت کو بڑھانے کے لئے کوئی خاطر خواہ کام نہیں کیا۔ اس مسئلے کا حل ہم نے انڈیا سے کیلے امپورٹ کر کے نکال لیا ہے۔ دو،تین ہفتے قبل جب مَیں اسلام آباد گئی تو وہاں کیلے180 اور 200 روپے درجن فروخت ہو رہے تھے، جبکہ آج لاہورمیں کیلے کی قیمت300 روپے بتائی جا رہی ہے۔ قیمت تو اس کی ایک طرف رہ گئی، میرے لئے سب سے حیران کُن بات یہ تھی کہ یہ درجن کے حساب سے نہیں، بلکہ کلو کے حساب سے فروخت ہو رہے تھے۔ پاکستان بننے سے لے کرآج تک ہم کیلے درجن کے حساب سے خریدتے آئے ہیں۔ مجھے یہ سُن کر خیال آیا، شاید کچھ عرصے بعد انڈے بھی کلو کے حساب سے فروخت ہونے لگیں، اگر یہ مذاق ہے تو کبھی بھی حقیقت بن جائے گا۔ رہی انڈین کیلے کی بات تو اپنے گاہک کی حیرانی کو دور کرنے کے لئے دکاندار کیلے کی خوبیاں بیان کرنے لگتے ہیں۔

مجھے اچھی طرح یاد ہے جب انڈیا سے تجارتی معاہدے طے پا رہے تھے تو تاجروں کی تشویش بھی سامنے آئی، جن کا خیال تھا کہ انڈین پھل سستا بکے گا، تو اُن کی تجارت کو نقصان ہوگا، مگر اب گاہک نقصان اُٹھا رہا ہے اور تاجر حضرات فائدہ، کیونکہ تاجر حضرات 40 سے 60 روپے فی درجن کے حساب سے نفع کما رہے ہیں۔ یہ بھی سننے میں آیا ہے کہ ہمارے ”کو چیئرمین“ نے آم اور انگور بھی انڈیا سے امپورٹ کئے، مگر وہ اس سے من چاہی قیمت وصول نہ کر سکے، یا وہ ہمارے گاہکوں کو پسند نہیں آیا۔ پاکستانی کیلے کی پیداوار صرف متاثر ہوئی ہے، مگر کیلا مارکیٹ سے ایسے غائب ہوا، جیسے گدھے کے سر سے سینگ۔ بات صرف یہ ہے کہ کیلے جیسے پھل کو عام لوگوں کی دسترس میں ہونا چاہئے، کیونکہ چاول، گندم اور مکئی کے بعد چوتھی خوراک کیلا ہی استعمال ہوتی ہے۔

کیلا ایک ایسا پھل ہے جو بیمار، بچے، بوڑھے کے لئے ہر طرح سے غذائیت کے اعتبار سے مکمل خوراک کا درجہ رکھتا ہے ، کیونکہ کیلے میں 75 فیصد پانی، وٹامن اے، وٹامن بی6، وٹامن سی اور پوٹاشیم شامل ہے۔ کیلا پورا سال پیدا ہونے والا پھل ہے۔ اگر ہم اس کی کمی کا شکار ہوئے ہیں، تو اس کا مطلب یہ ہُوا کہ ہمارے زرعی ماہرین نے اس پر مناسب کام نہیں کیا یا ان ماہرین کی رائے ایوانِ بالا تک نہیں پہنچی۔ اگر ہم یہ اندازہ لگانا چاہیں کہ کون سا ملک کیلے کی پیداوار میں سرفہرست ہے تو وہ یقیناً انڈیا ہے، جہاں سے آج ہم کیلے منگوانے پر مجبور ہوئے۔ انڈیا اکیلا16.8 ملین میٹرک ٹن کیلا پیدا کرتا ہے۔دوسرے نمبر پر برازیل ہے جو 6.7 ، چین 6.4، ایکواڈور 5.9، فلپائن5.8 ، انڈونیشیا 4.5 ،کوسٹا وائس2.2، میکسیکو اور تھائی لینڈ2.0، کولمبیا اور برونڈی1.6 ملین میٹرک ٹن کیلا پیدا کرتے ہیں۔ گوکہ انڈیا کی پیداوار تمام ممالک سے زیادہ ہے، مگر کیلے برآمد کرنے کا بادشاہ ملک ایکواڈور ہے، اس سے اندازہ لگائیں کہ اب ہم کیلے کی پیداوار میں بھی کس قدر پیچھے رہ گئے ہیں۔    ٭

مزید :

کالم -