بھارت اورجرمنی کا مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کو نئی جہت دینے کا عہد

بھارت اورجرمنی کا مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کو نئی جہت دینے کا عہد

نئی دہلی(این این آئی) بھارت اور جرمنی نے اپنے باہمی تعلقات کومزید مستحکم بنانے اور انہیں نئی بلندیوں تک لے جانے کا عہد کیاہے، دونوں ملکوں نے تجارت، سرمایہ کاری، جدید ٹیکنالوجی کے شعبوں میں باہمی تعاون کو نئی جہت دینے کا فیصلہ کیا، وفاقی جرمن وزیر خارجہ فرانک والٹر شٹائن مائر کے بھارت کے دو روزہ سرکاری دورے کے اختتام پر پیر کو نئی دہلی میں بھارتی حکام نے بتایاکہ بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے اپنے جرمن ہم منصب کے ساتھ باہمی دلچسپی کے متعدد امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ وزارت خارجہ کے ترجمان سید اکبر الدین نے ٹویٹر پر اپنے ایک پیغام میں کہاکہ دونوں رہنماﺅں کے درمیان تجارت، سرمایہ کاری، اعلی ٹیکنالوجی اور قابل تجدید توانائی کے شعبوں میں باہمی تعاون پر بات چیت ہوئی۔ جرمن وزیر شٹائن مائر ایک اعلی سطحی تجارتی وفد کے ساتھ دہلی آئے تھے۔ اپنے دورے کے دوران جرمن وزیر خارجہ فرانک والٹر شٹائن مائر نے بالخصوص دونوں ملکوں کے مابین باہمی تجارت کو فروغ دینے پر زور دیا، انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کی اور علاقائی اور عالمی سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا۔ بعد میں انہوں نے بھارتی وزیر خارجہ سے ملاقات کی۔ حکام نے بتایا کہ جرمن رہنما نے بالخصوص افغانستان کی تازہ ترین صورت حال اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اصلاحات کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا۔ دریں اثنا بھارت میں جرمن سفیر میشائیل اشٹائنر نے کہاکہ بھارت اور جرمنی کے درمیان اسٹریٹیجک مفادات میں کسی طرح کا تصادم نہیں ہے۔ ہمارے مفادات مشترکہ ہیں۔

 اگر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی بات کریں یا اگر افغانستان اور دیگر امور پر بات کریں، تو ایسے بہت سے شعبے ہیں جہاں ہم ایک دوسرے کے ساتھ مل کر کام کرسکتے ہیں کیونکہ ہمارے مفادات میں کسی طرح کا تصادم نہیں ہے۔ قبل ازیں جرمن وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اصلاحات کے حوالے سے کہا کہ سلامتی کونسل میں اصلاحات ناگزیر ہیں کیونکہ یہ موجودہ جغرافیائی اور سیاسی حقائق کی عکاسی نہیں کرتی اور اس میں اصلاحات کے بغیر اس کا معتبر ہونا خطرے میں پڑ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جرمنی اور بھارت سلامتی کونسل میں اصلاحات کے لیے مل کر کام کر رہے ہیں اور آئندہ بھی کرتے رہیں گے۔ جرمن وزیر خارجہ نے انسانی وسائل کے فروغ کی بھارتی وزیر سمرتی ایرانی، شہری ترقی کے مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو اور صنعت و تجارت کی وزیر نرملا سیتا رمن سے بھی تبادلہ خیال کیا۔ فرانک والٹر شٹائن مائر نے بھارت میں مرکزی حکومت کے تحت چلنے والے سینٹرل اسکولوں میں جرمن زبان کی تعلیم کے پروگرام میں ہونے والی پیش رفت کا بھی جائزہ لیا۔

مزید : عالمی منظر