فیصل آباد سے گرفتار ہونے والے آزدی و انقلاب مارچ کے 170ارکان رہا

فیصل آباد سے گرفتار ہونے والے آزدی و انقلاب مارچ کے 170ارکان رہا


فیصل آباد(بیورورپورٹ)باخبر ذرائع کے مطابق کریک ڈاؤن کے دوران فیصل آباد سے گرفتار ہونے والے آزدی و انقلاب مارچ کے 194میں سے 170ارکان رہا کر دیئے گئے جن میں گزشتہ روز بھی مزید تین افراد جن میں چک 591گ ب کے محمد کامران‘ پیپلزکالونی کے ذیشان علی گوہر اور اس کے بھائی سلیمان علی گوہر بھی شامل ہیں فیصل آباد پولیس نے پاکستان عوامی تحریک کے خلاف کریک ڈاؤن کے دوران 84کارکنوں اور پاکستان تحریک انصاف کے 110کارکنوں کو گرفتار کر لیا گیا تھا جن کو ڈی سی او فیصل آباد کے حکم پر ڈسٹرکٹ و سینٹرل جیل میں ایک ماہ کے لئے نظر بند کر دیا گیا تھا پاکستان عوامی تحریک کے تقریبا 82کارکنوں کو نظر بندی کی مدت ہونے پر رہا کر دیا گیا اور اب صرف دو کارکن اپنی سزا پوری کر رہے ہیں جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے 110کارکنوں میں سے 88کارکنوں کو شورٹی بانڈ لیکر رہا کر دیا گیا ہے اور 22کارکن ابھی تک جیل میں نظر بند ہیں ذرائع کے مطابق نظربند سیاسی کارکن اگر شورٹی بانڈ نہیں جمع کرواتے تو ان کو اپنی نظر بندی کی مدت جیل میں پوری کرنا پڑے گی اور اپنی سزا مکمل ہونے پر رہا ہو ں سکیں گے.

170ارکان رہا

مزید : علاقائی