میڈیا ملکی بقاءکی جنگ لڑنے والوں کا ساتھ دے، ڈاکیارڈ پر حملے کے ملزم پکڑلیے : وزیردفاع

میڈیا ملکی بقاءکی جنگ لڑنے والوں کا ساتھ دے، ڈاکیارڈ پر حملے کے ملزم پکڑلیے : ...
میڈیا ملکی بقاءکی جنگ لڑنے والوں کا ساتھ دے، ڈاکیارڈ پر حملے کے ملزم پکڑلیے : وزیردفاع

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیردفاع خواجہ آصف نے بتایاکہ نیوی ڈاکیارڈ پر حملہ کرنیوالے سات دہشتگردوں کو حراست میں لے لیاگیاہے جن سے تفتیش جاری ہے جبکہ سمنگلی بیس پر حملہ کرنیوالے تمام دہشتگردمارے گئے ، سیکیورٹی فورسز نے بہادری سے کارروائی کرتے ہوئے دہشتگردانہ عزائم ناکام بنادیئے ۔اُنہوں نے میڈیا سے اپیل کی کہ ڈی چوک میں انا کی جنگ لڑنے والوں کا ساتھ دینے کی بجائے ملک کی بقاءکی جنگ لڑنے والوں کا ساتھ دیں ۔

قومی اسمبلی کے سپیکر سردارایازصادق کی زیرصدارت ہونیوالے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ آصف نے بتایاکہ چھ ستمبر کو کراچی میں دہشگردوں کے گردوں کے گروہ نے ڈاکیارڈ پر حملہ کیاجسے نیوی اہلکاروں نے ناکام بنادیا، سیکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں تین دہشتگردمارے گئے جبکہ سات کو گرفتار کرلیاگیاجن سے تفتیش جاری ہے ۔اُنہوں نے بتایاکہ حملے کے نتیجے میں ایک اہلکار شہید اور چندزخمی ہوئے ، حملہ آوروں کے قبضے سے 3اے کے 47، نو پستول ، تین وائرلیس سیٹ، چار خود کش جیکٹ، دوڈیٹونیٹر، 24دستی بم ، سٹیلائیٹ فون اور بدقسمتی سے کچھ مذہبی کتابیں ملی ہیں ۔وفاقی وزیرکاکہناتھاکہ حملے میں اندرونی امداد کو ردنہیں کیاجاسکتاتاہم ابھی تحقیقات جاری ہیں اس لیے وہ مزید کچھ کہنا مناسب نہیں سمجھتے، حتمی طورپر کچھ کہابھی نہیں جاسکتا۔وزیردفاع کاکہناتھاکہ گرفتارملزموں میں سے ایک شخص کے رابطے شمالی وزیرستان میں بھی ہیں اور یہ ’ضرب عضب‘ کا ردعمل بھی ہوسکتاہے ۔

اُنہوں نے بتایاکہ 14اگست کی رات کو سمنگلی بیس پر پونے دس بجے ایئرفورس کے سیکیورٹی اہلکاروں نے غلط پارک کی گئی سوزوکی کی نشاندہی کی جس کے بعد ایک نالے میں مشکوک حرکات دیکھی گئیں اورپھر ایکشن لیتے ہوئے جوابی کارروائی کی گئی ، دہشتگردوں کو مذموم مقاصدپورے کرنے میں ناکامی کا سامنا کرناپڑا۔اُنہوں نے بتایاکہ ایک راکٹ کے ذریعے دیوارمیں سوراخ کیاگیاجس کے نتیجے میں دوحملہ آور اندر داخل ہونے میں کامیاب ہوگئے جبکہ باہرموجود تین حملہ آوروں نے خود کو اُڑالیا اورایک مقابلے میں فائرنگ سے ماراگیا۔اُنہوں نے بتایاکہ اندرداخل ہونیوالے دونوں افراد مقابلے میں فائرنگ کے نتیجے میں مارے گئے جبکہ صبح تک سرچ آپریشن مکمل کرکے علاقے کو کلیئرکردیاگیا، اس ساری کارروائی میں 10اہلکارزخمی ہوئے تاہم کوئی جانی ومالی نقصان نہیں ہوا۔

وفاقی وزیردفاع کاکہناتھاکہ ”ضرب عضب“ کے نتیجے میں دہشتگرد جوابی کارروائی کررہے ہیں اوراس سارے مسئلے میں توجہ پارلیمنٹ کے باہر ڈی چوک پر ہے ، میڈیا سے درخواست ہے کہ ایک طرف لوگ پاکستان کی بقاءکی جنگ لڑرہے ہیں ، پارلیمنٹ کے باہر موجود لوگ اپنی انا کی جنگ لڑہے ہیں ، عرض کرناچاہتے ہیں کہ ملک کی بقاءکی جنگ لڑنے والوں کے ساتھ کھڑے ہوں اور انشاءاللہ پاکستان کی فتح ہوگی ،ایوان جیتے گا۔

مزید : قومی /Headlines