’سویٹ اینڈکنفکشنری کے مسائل‘ کے حوالے سے خصوصی اجلاس کاانعقاد

’سویٹ اینڈکنفکشنری کے مسائل‘ کے حوالے سے خصوصی اجلاس کاانعقاد

لاہور(کامرس رپورٹر) فیڈریشن آف پاکستان چیمبر زآف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) کے نائب صدر حمید اختر چڈھا کی زیر صدرات ’’ سویٹ اینڈکنفکشنری کے مسائل‘‘ کے حوالے سے خصوصی اجلاس منعقد کیا گیا۔جس میں ایف پی سی سی آئی کی ریجنل قائمہ کمیٹی برائے سویٹ اینڈکنفکشنری کے چےئرمین مظہر اقبال بٹ،چےئرمین آل پاکستان کاٹیج انڈسٹری غلام سرور ہجویری،محمد عاصم،محمد علی بٹ،امیر علی صدیقی،قمرالدین ملک،تنویر احمد اور دیگر نے شرکت کی۔اس موقع پر اجلاس کے شرکاء سے خطا ب کرتے ہوئے ایف پی سی سی آئی کے نائب صدر حمید اختر چڈھا نے کہا کہ حکومت بیکری ملکان کے مسائل مشاورت کے ساتھ حل کرنے کیلئے فوری اقدامات کرئے اورپنجاب فوڈ اٹھارٹی کو اپنے اختیارات میں رہ کر کام کرنیکی تلقین کرئے۔انہوں نے ایف پی سی سی آئی کی ریجنل قائمہ کمیٹی برائے سویٹ اینڈکنفکشنری کے چےئرمین مظہر اقبال بٹ کو بیکرز ملکان کے مسائل کو حکومت تک پہنچانے اور اس کے حل کے لئے مثبت اقدامات کے لئے ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کروائی۔

ایف پی سی سی آئی کی ریجنل قائمہ کمیٹی برائے سویٹ اینڈکنفکشنری کے چےئرمین مظہر اقبال بٹ نے کہا کہ ایک ہی بزنس مین کو فیکٹری لائسنس اور شاپ لائسنس کی مد میں الگ الگ فیس دینی پڑتی ہے اس کو ختم کیا جائے۔ترقیاتی پراجیکٹ میں آنے والی زمین اور دکانوں کو مارکیٹ ویلو کے مطابق قیمت دی جائے۔چےئرمین آل پاکستان کاٹیج انڈسٹری غلام سرور ہجویری نے کہا کہ سوئی گیس محکمہ ہمارے تین ماہ کی سکیورٹی رکھتی ہے اگر ایک ماہ کا بل نہ دیا جائے تو کنکشن کاٹ دیا جاتا ہے جو زیادتی ہے۔فوڈ اتھارٹی کے بے جا چھاپوں اور میڈیا کی غلط رپورٹنگ کی وجہ سے انٹر نیشنل مارکیٹ میں ہماری ایکسپورٹ پر منفی اثرات پڑ رہے ہیں۔محمد علی بٹ نے کہا کہ حکومت کی طرف سے عائد ود ہولڈنگ ٹیکس کسی صورت قبول نہیں ہے۔محمد عاصم نے کہا کہ فوڈ اتھارٹی چھاپے مارنے سے پہلے میڈیا مہم چلائے۔فوڈ اتھارٹی میں موجود ماہانہ لینے والی بلیک شپ کو پکڑ کر سزا دی جائے۔

مزید : کامرس