احتیاط نہ کرنے سے کپاس کی 10فیصد فصل ضائع ہوجاتی ہے: ماہرین

احتیاط نہ کرنے سے کپاس کی 10فیصد فصل ضائع ہوجاتی ہے: ماہرین

لاہور(کامرس رپورٹر)دھان کی کٹائی، پھنڈائی اور سنبھال میں مناسب احتیاط نہ برتنے سے اس کی پیداوار کا 5سے 10فیصد نقصان ہو جاتا ہے ۔مناسب وقت پر کٹائی اور پھنڈائی سے عمدہ اور ثابت چاول کی زیادہ مقدار حاصل ہونے سے کاشتکاروں کو بہتر معاوضہ ملتا ہے ۔محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان نے دھان کے کاشتکاروں کو سفارش کی ہے کہ وہ دھان کی موٹی اقسام کے لیے کٹائی اور پھنڈائی مناسب وقت پر شروع کریں۔

۔ جب مونجر کے اوپر والے دانے اچھی طرح پک جائیں اور دانوں میں 20 تا 22 فیصد نمی ہو توفصل کی کٹائی کریں۔دھان کی فصل پر تقریباََ 20فیصد مزدوروں سے اوربقیہ 80فیصد کمبائین ہارویسٹر کے ذریعے کاٹا جاتا ہے ۔ہاتھ سے کٹائی کے بعد اس کی جلد از جلد پھنڈائی کر لی جائے اور رات کے وقت ان دانوں کو ترپال یا پرالی سے ڈھانپ دیا جائے تاکہ دانے اوس کی نمی سے محفوظ رہیں ۔ کٹائی اور پھنڈائی کے درمیان جتنا زیادہ وقفہ ہوگا،حاصل کردہ چاول کی ریکوری اتنی ہی کم ہوتی جائے گی۔

مزید : کامرس