مظلوم فلسطینیوں کے خلاف اسرائیل کا ایک اور خوفناک اقدام، اب زمین کے نیچے دیوار بنانا شروع کردی کیونکہ۔۔۔ تفصیلات کسی بھی مسلمان کو غصہ دلادیں

مظلوم فلسطینیوں کے خلاف اسرائیل کا ایک اور خوفناک اقدام، اب زمین کے نیچے ...
مظلوم فلسطینیوں کے خلاف اسرائیل کا ایک اور خوفناک اقدام، اب زمین کے نیچے دیوار بنانا شروع کردی کیونکہ۔۔۔ تفصیلات کسی بھی مسلمان کو غصہ دلادیں

  


یروشلم (نیوز ڈیسک) مقبوضہ علاقوں کے مظلوم عوام کو محصور کرنے کے لئے زمین پر باڑ لگانے اور دیواریں تعمیر کرنے کی مثالیں تو بہت ملتی ہیں لیکن اسرائیل دنیا کا وہ واحد سفاک ملک ہے جس نے غزہ کے مظلوموں کو محصور کرنے کے لئے زمین کے نیچے بھی کنکریٹ کی دیوار کی تعمیر شروع کردی ہے۔

اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی سرحدکے ساتھ واقع غزہ کے تمام علاقوں میں زیر زمین دیوار کی تعمیر شروع کردی گئی ہے، جس کے لئے اسرائیلی حکومت نے بہانہ یہ بنایا ہے کہ حماس کے جنگجو زمین کے نیچے سرنگیں بنا کر اسرائیل میں داخل ہونے کی کوشش کرتے ہیں۔ ویب سائٹ وائی نیٹ نیوز کی جانب سے ایک ویڈیو بھی پوسٹ کی گئی ہے جس میں ہیوی مشینری غزہ کی جانب رواں دواں اور اسرائیلی سرحد پر کام کرتی دیکھی جاسکتی ہے۔

اسرائیلی حکومت نے زیر زمین کنکریٹ کی دیوار تعمیر کرنے کی رپورٹ کی تصدیق یا تردید نہیں کی ہے البتہ ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی وزارت دفاع ایک عرصے سے اس منصوبے کو حقیقت کی شکل دینے کے لئے بے تاب تھی۔ وائی نیٹ کی رپورٹ کے مطابق زیر زمین دیوار کے اندر جدید ٹیکنالوجی سے لیس سینسر بھی لگائے جائیں گے تاکہ کوئی اس کے قریب بھی آئے تو اس کا پتا چل جائے۔ یہ دیوار 60 کلومیٹر طویل ہوگی۔

داعش کے خلاف جس کامیابی کا ترکی کو شدت سے انتظار تھا، وہ مل گئی، شام میں ترک ٹینکوں کے داخلے کے بعد اب تک کی سب سے بڑی خبر آگئی

واضح رہے کہ غزہ کی پٹی ایک دہائی سے زائد عرصے سے اسرائیل کے محاصرے میں ہے۔ اہل غزہ کے لئے مصر کی سرحد کی جانب ایک ہی راستہ بچا تھا لیکن اسرائیل اسے بھی بند کرچکا ہے۔ ان کی زمین کے اوپر اسرائیلی افواج تعینات ہیں، خاردار تاریں بچھی ہیں اور ٹینک حرکت کررہے ہیں، اور اب زیر زمین بھی کنکریٹ کی دیوار تعمیر کی جا رہی ہے۔

مزید : بین الاقوامی