رکنگ فوکس گرامر سکول کوھاٹ کے کنٹریکٹ ملازمین کا سات ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر احتجاجی مظاہرہ

رکنگ فوکس گرامر سکول کوھاٹ کے کنٹریکٹ ملازمین کا سات ماہ سے تنخواہوں کی عدم ...

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) ورکنگ فوکس گرامر سکول کوھاٹ کے کنٹریکٹ ملازمین کا سات ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر احتجاجی مظاہرہ‘ عید سے قبل تنخواہیں ریلیز کرنے اور انہیں ریگولر کرنے کا مطالبہ’ تفصیلات کے مطابق ورکنگ فوگس گرامر سکول کوھاٹ کے ٹیچرز اور دیگر کنٹریکٹ ملازمین نے کوھاٹ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہر کیا جس کی قیادت ورکرز ویلفیئر بورڈ یونین کے صوبائی نائب صدر ڈاکٹر نور ولی خان‘ جنرل سیکرٹری اسیر اللہ‘ شفیع اللہ خان‘ نورین خٹک‘ مس عندلیب اور بی بی حوا نے کی قائدین نے کہا کہ ورکرز ویلفیئر بورڈ کے تحت کام کرنے والے یہ ملازمین سات ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیں اور ان کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ چکے ہیں جو مزدوروں کے معاشی قتل کے مترادف ہے انہوں نے کہا کہ کنٹریکٹ پر یہ ملازمین عرصہ 8/7 سال سے کام کر رہے ہیں مگر تاحال انہیں مستقل نہیں کیا جا رہا جس کے لیے ہم نے 62 دن تک بنی گالہ میں دھرنا بھی دیا تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے انہیں مستقل کرانے کا اعلان بھی کیا مگر خیبر پختونخوا کی انصاف کی علمبردار حکومت نے تاحال کوئی اقدامات نہیں اٹھائے اور ملازمین فاقہ کشی کا شکار ہیں انہوں نے کہا کہ ورکرز ویلفیئر بورڈ کے پاس وافر مقدار میں فنڈ موجود ہونے کے باوجود انہیں تنخواہوں کی ادائیگی نہیں کی جا رہی ہمارا مطالبہ ہے کہ عید سے قبل ہماری سات ماہ کی تنخواہیں ریلز کی جائیں اور تمام کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کیا جائے ورنہ عید کے بعد آئندہ کا لائحہ عمل طے کر کے اسمبلی ہال کے سامنے دھرنا دینے پر مجبور ہوں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -