پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو خاوند کے ہمراہ جانے کی اجازت

پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو خاوند کے ہمراہ جانے کی اجازت

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے لو میرج کرنے والی لڑکی کو خاوند کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی،عدالتی فیصلے کے بعد لڑکی اور لڑکے کے رشتہ دار کمرہ عدالت کے باہر ایک دوسرے سے الجھ پڑئے ،احاطہ عدالت میدان جنگ بن گیا۔جسٹس انوارالحق کے روبرو شیخوپورہ کی رہائشی درخواست گزار خاتون نے موقف اخیار کیا تھا کہ غلام مصطفی نامی شخص نے اس کی بیٹی کو اغوا کر رکھا ہے ،عدالت اس کی بیٹی کو بازیاب کرائے۔عدالتی حکم پر تھانہ مانوالہ پولیس نے صبا نامی لڑکی کو بازیاب کرا کے عدالت میں پیش کر دیا۔صبا نامی لڑکی نے عدالت میں بیان دیا کہ اسے کسی نے اغوا ء نہیں کیا بلکہ اس نے غلام مصطفی سے پسند کی شادی کی ہے جس پر عدالت نے لڑکی کے بیان کی روشنی میں اسے خاوند کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی۔عدالتی فیصلے کے بعد دونوں میاں بیوی کمرہ عدالت سے باہر نکلے تو پیشی پر آئے فریقین کے رشتہ دار گالیاں نکالتے ہوئے آپس میں الجھ پڑے،موقع پر موجود پولیس اہلکاروں نے فریقین میں بیچ بچاؤ کرایا۔

مزید : صفحہ آخر